انٹرنیشنل

بنگلہ دیش، سرکاری ملازمتوں کے حصول میں کوٹہ تقسیم، ہزاروں طلباء سڑکوں پر نکل آئے’ حکومت کو بغاوت کا خطرہ

طلباء احتجاجی مظاہرے میں سرکاری ملازمتوں میں آزادی کے ہیروز کے بچوں کے کوٹے کو امتیازی سلوک قرار دے کر اس کے خاتمے کا مطالبہ کر رہے تھے

بنگلہ دیش (مانیٹرنگ ڈیسک) بنگلہ دیش میں سرکاری ملازمتوں کے حصول میں کوٹہ تقسیم کر دیا گیا جس کے بعد ہزاروں طلباء سڑکوں پر نکل آئے جس سے حکومت کیلئے بغاوت کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق بنگلہ دیش میں یونیورسٹی کے ہزاروں طلبا نے اہم شاہراہوں پر رکاوٹیں کھڑی کر کے مظاہرہ کیا۔ وہ سرکاری ملازمتوں میں آزادی کے ہیروز کے بچوں کے کوٹے کو امتیازی سلوک قرار دے کر اس کے خاتمے کا مطالبہ کر رہے تھے۔ تقریبا تمام یونیورسٹیوں کے طالب علموں نے مظاہروں میں شرکت کی اور یہ مطالبہ کیا کہ کوٹہ سسٹم ختم کر کے سول سروس کی ملازمتوں کے لیے میرٹ پر مبنی نظام قائم کیا جائے۔

ناقدین کا کہنا ہے کہ کوٹہ سسٹم سے صرف وزیراعظم شیخ حسینہ کے حامیوں اور حکومت نواز گروپوں کے بچوں کو فائدہ پہنچ رہا ہے۔ شیخ حسینہ بنگلہ دیش کے بانی مجیب الرحمن کی صاحب زادی ہیں۔ شیخ حسینہ کی عمر 76 سال ہے۔ انہوں نے جنوری میں مسلسل چوتھی بار اپنے عہدے کے لیے الیکشن جیتا تھا۔ ناقدین کا کہنا تھا کہ انہیں یہ کامیابی ایسے میں ملی کہ انہیں کسی حقیقی حز ب اختلاف کا سامنا نہیں تھا اور اپنے سیاسی مخالفین کے خلاف انہوں نے بڑے پیمانے پر کریک ڈان کیا تھا جس کی وجہ سے بڑے پیمانے پر انتخابات کا بائیکاٹ کیا گیا تھا۔

ڈھاکہ یونیورسٹی میں احتجاج ریلی کے دوارن مظاہرے کی آرگنائزر ناہید السلام نے خبررساں ادارے اے ایف پی سے کہا کہ ہمارے لیے اب صورت حال کرو یا مرو کی سطح پر پہنچ چکی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ، کوٹہ ایک امتیازی نظام ہے۔ اب اس میں اصلاح کرنی ہو گی۔ کوٹہ کے نظام کے تحت آدھی سے زیادہ آسامیاں مخصوص افراد کے لیے مختص ہیں۔ سرکاری ملازمتوں میں کوٹے کی تعداد ہزاروں تک پہنچ جاتی ہے۔ بنگلہ دیش میں سرکاری ملازمتوں کا 30 فی صد کوٹہ ان افراد کے بچوں کے لیے مختص ہے، جنہیں آزادی کے ہیروز کیا جاتا ہے۔ یہ وہ لوگ ہیں جنہوں نے 1971 میں بنگلہ دیش کی آزادی کے لیے جنگ لڑی تھی۔ 10 فی صد نشتیں خواتین کے لیے ہیں جب کہ 10 فی صد مخصوص اضلاع کے لیے رکھی گئیں ہیں۔ طالب علموں کا کہنا ہے کہ صرف اقلیتوں اور معذور افراد کا کوٹہ باقی رکھا جائے جو مجموعی طور پر 6 فی صد ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button