انٹرنیشنل

بھارت میں میڈیا کی آزادی پرتیزی سےحملے،فرانسیسی صحافی کو کیوں نکالا گیا؟

حساس موضوعات پر بات کرنے والے صحافیوں کو اکثر حکومتی سرزنش کا نشانہ بنایا جاتا ہے

نئی دہلی (ویب ڈیسک)بھارت میں میڈیا کی آزادی پرتیزی سےحملے،فرانسیسی صحافی کو کیوں نکالا گیا؟وجوہات سامنے آگئیں ،مودی سرکار کا مکروہ چہرہ ایک بار پھر بے نقاب۔رپورٹ کے مطابق فرانسیسی صحافی نے انکشاف کیا ہے کہ انہوں نے 13 برس سے زائد عرصے کے بعد بھارت چھوڑ دیا تھا کیونکہ انہیں ورک پرمٹ دینے سے انکار کردیا گیا تھا، اس فیصلے کو انہوں نے ”ناقابل فہم سنسرشپ“ کا عمل قرار دیا۔

ناقدین کا کہنا ہے کہ بھارت میں میڈیا کی آزادی پر تیزی سے حملے ہو رہے ہیں، حساس موضوعات پر بات کرنے والے صحافیوں کو اکثر حکومتی سرزنش کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔ریڈیو فرانس انٹرنیشنل اور فرانسیسی زبان کے دیگر بڑے میڈیا آؤٹ لیٹس کے لیے کام کرنے والے سیبسٹین فارس نے بتایا کہ جب انہیں رواں برس مارچ اطلاع ملی کہ بطور صحافی انہیں ورک پرمٹ کی اجازت میں توسیع نہیں ملی تو رواں ہفتے کے شروع میں بھارت چھوڑ دیا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button