انٹرنیشنل

مقبوضہ کشمیرمیں حملے،مودی سرکاردہل کر رہ گئی،دہلی میں بڑی بیٹھک

مودی کی صدارت میں ایک بڑی بیٹھک ہوئی جس میں مسلح افوج کے سربراہان ضفیہ ایجنسیوں کے سربراہان اور گورنر جموں کشمیر بھی شریک ہوئے

 نئی دلی (ویب ڈیسک)مقبوضہ کشمیر میں چار مسلسل حملوں کے بعد مودی سرکار دہل کر رہ گئی ،رپورٹس کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں پے درپے حملوں کے بعد دہلی میں ہائی الرٹ جاری کردیا گیا وزیراعظم مودی کی صدارت میں ایک بڑی بیٹھک ہوئی جس میں مسلح افوج کے سربراہان ضفیہ ایجنسیوں کے سربراہان اور گورنر جموں کشمیر بھی شریک ہوئے ۔واضح ہو کہ وزیراعظم نریندر مودی کی تقریب حلف برداری سے صرف ایک گھنٹہ قبل انڈیا کے زیر انتظام کشمیر میں ایک حملہ ہوا۔ جموں کے رِیاسی ضلع میں ہندو یاتریوں سے بھری بس پر ہونے والے اس مسلح حملے میں 9 افراد کی ہلاکت کے بعد قریبی علاقوں میں بھی تشدد کی لہر بھڑک اُٹھی۔

یہ حالیہ دنوں میں ایسا واحد واقعہ نہیں بلکہ انڈیا کی سکیورٹی فورسز پر چار دن میں چار حملے ہو چکے ہیں جن میں اب تک 2 مسلح عسکریت پسند اور ایک پیراملٹری اہلکار ہلاک ہوئے جبکہ ایک عام شہری سمیت کئی پولیس اور فوجی اہلکار زخمی بھی ہوئے۔ پولیس کے مطابق کٹھوعہ کے ہیرا نگر علاقے میں دو عسکریت پسند ہلاک ہوئے تاہم دیگر مقامات پر حملہ آور فرار ہونے میں کامیاب ہوئے جنھیں تلاش کرنے کی مہم جاری ہے۔

واضح رہے کہ جموں کے یہ علاقے دو دہائیوں سے نسبتاً پُرامن تصور کیے جاتے ہیں۔ تاہم تشدد کی اس اچانک لہر کے بعد پورے جموں خطے میں فوج اور دیگر سیکیورٹی ایجنسیوں نے ریڈالرٹ کا اعلان کیا ہے اور متاثرہ بستیوں کے اِرد گرد وسیع علاقوں میں تلاشی مہم جاری ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button