انٹرنیشنل

کشمیر کےعلاقےمیں عسکریت پسندوں کا قبضہ،کتنے بھارتی فوجی ہلاک ہوچکے؟مودی سرکار کے ہوش ٹھکانے لگا دینے والے اعدادوشمارمنظرعام پر آگئے

بھارت کے زیرانتظام جموں وکشمیر میں عام طور پروادی کشمیر کےعلاقےمیں عسکریت پسندی کا غلبہ رہا ہے،تاہم گزشتہ چند ماہ سےخطہ جموں میں بھارتی فوج پرحملوں میں تیزی دیکھی گئی ہے

جموں(ویب ڈیسک)کشمیر کےعلاقےمیں عسکریت پسندوں کا قبضہ،کتنے بھارتی فوجی ہلاک ہوچکے؟مودی سرکار کے ہوش ٹھکانے لگا دینے والے اعدادوشمارمنظرعام پر آگئے۔رپورٹ کے مطابق بھارت کے زیرانتظام جموں وکشمیر میں عام طور پروادی کشمیر کےعلاقےمیں عسکریت پسندی کا غلبہ رہا ہے،تاہم گزشتہ چند ماہ سےخطہ جموں میں بھارتی فوج پرحملوں میں تیزی دیکھی گئی ہے۔ جموں خطے میں گزشتہ ایک ماہ کے اندر اس نوعیت کا یہ ایسا پانچواں حملہ ہے، جس میں بھارتی فوج کو کافی تکلیف پہنچی ہے۔ رپورٹ میں بتیا گیا ہے کہ اب تک عسکریت پسندوں کے حملوں کے نتیجے میں 51 سے زائد بھارتی فوجی اور افسران ہلاک ہوچکے ہیں تاہم بھارتی میڈیا پروپیگنڈہ کررہا ہے کہ جموں میں محض چند بھارتی فوجی ہلاک ہوئے ہیں ۔

راجوری ضلع میں ایک فوجی کیمپ پر حملہ ہوا تھا، جس میں ایک فوجی زخمی ہوا۔ جبکہ پیر کے اس حملے سے محض 24 گھنٹے قبل وادی کشمیر میں دو انکانٹر ہوئے تھے۔جنوبی ضلع کولگام میں دو مختلف تصادم میں چھ عسکریت اور دو بھارتی فوجی ہلاک ہوئے تھے۔ کشمیر پولیس کے مطابق ان واقعات میں ایک پیرا ٹروپر سمیت دو فوجی مارے گئے جبکہ ایک شدید طور پر زخمی ہوا۔ گزشتہ ماہ بھی جموں خطے کے ضلع ریاسی میں شدت پسندوں نے ایک بس پر فائرنگ کر دی تھی جس کی وجہ سے بس کھائی میں گرنے سے نو افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ اس واقعے کچھ دن بعد ہی مسلح عسکریت پسندوں نے ایک گاں میں فائرنگ کی اور جب سکیورٹی فورسز وہاں پہنچے، تو اس کے بعد ہونے والی گولی باری میں سی آر پی ایف کا ایک اہلکار اور دو عسکریت پسند ہلاک ہو گئے تھے۔پولیس نے بتایا کہ گزشتہ ماہ جموں کے ڈوڈا ضلع کے گندوہ علاقے میں عسکریت پسندوں اور سکیورٹی فورسز کے درمیان شدید گولی باری کے بعد تین شدت پسند مارے گئے تھے۔ خیال کیا جاتا ہے کہ یہ عسکریت پسند کشمیر میں فوج اور پولیس پر حالیہ حملوں میں ملوث تھے۔
وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے فوجی جوانوں کی ہلاکت پر افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ بھارتی فوج خطے میں امن کو یقینی بنانے کے لیے پرعزم ہے۔ انہوں نے اپنی تعزیتی پیغام میں کہا، ”میں کٹھوعہ میں ایک ‘دہشت گردانہ’ حملے میں اپنے بہادر بھارتی فوج کے پانچ جوانوں کی ہلاکت پر بہت غمزدہ ہوں۔ سوگوار خاندانوں کے ساتھ میری گہری تعزیت ہے۔ قوم اس مشکل وقت میں ان کے ساتھ کھڑی ہے۔”ان کا مزید کہنا تھا، ”دہشت گردی کے خلاف جنگی پیمانے پر آپریشن جاری ہے اور ہمارے سپاہی خطے میں امن و امان قائم کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔ میں اس خوفناک دہشت گردانہ حملے میں زخمی ہونے والوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعا گو ہوں۔”ان کا کہنا تھا، ”ایک ماہ کے اندر پانچواں دہشت گرد حملہ ملک کی سلامتی اور ہمارے فوجیوں کی زندگیوں کے لیے ایک بڑا دھچکا ہے۔ ایسے مسلسل دہشت گرد حملوں کا حل کھوکھلی تقریروں اور جھوٹے وعدوں سے نہیں، بلکہ مضبوط کارروائی سے نکلے گا۔ غم کی اس گھڑی میں ہم ملک کے ساتھ کھڑے ہیں۔”

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button