دلچسپ و عجیب

‘ویلنٹائن ڈے’ پر سائنس کی حیران کن دریافت

آج 14فروری ہے جسے عام طور پر ‘ویلنٹائن ڈے’ بھی کہا جاتا ہے، بعض لوگ اس دن کو اپنے محبوب سے محبت کے اظہار کے لیے وقف کردیتے ہیں تو کئی لوگوں کے لیے یہ دن بھی عام دنوں کی طرح ایک مصروف دن ہوتا ہے تاہم بہت کم لوگ یہ جانتے ہیں کہ 14 فروری کو ایک اور دن بھی منایا جاتا ہے۔

جی ہاں، سائنس کے شوقین افراد بھی کم سے کم گزشتہ 3 دہائیوں سے ہر سال 14 فروری کے لیے بہت پرجوش ہوتے ہیں کیوں کہ سائنس سے وابستہ افراد ہر سال اس دن ‘ہلکے نیلے نقطے’ سالگرہ منا رہے ہوتے ہیں، عام افراد کو سننے میں یہ بات بہت عجیب لگے گی تاہم اس کا تصور ہی دماغ کے دریچوں کو کھولنے کے لیے کافی ہے۔

سائنس کے شوقین افراد یہ جانتے ہیں کہ انسانوں کی بنائی گئی کل 3 خلائی گاڑیاں ایسی ہیں کہ جن میں سے 2 ہمارے نظام شمسی سے باہر جا چکی ہیں اور تیسری نظام شمسی کے کنارے پر ہے، یہ خلائی گاڑیاں وائجر ون، وائجر ٹو اور نیو ہورائیزن ہیں، ان تینوں نے اپنی اپنی منزلیں طے کیں اور ہمیں نظام شمسی کے بیرونی سیاروں، جن میں مشتری، زحل، یورینس اور نیپچون اور بونا سیارہ پلوٹو شامل ہے کے بارے میں معلومات فراہم کی لیکن وائجر ون خلائی گاڑی نے وہ کارنامہ کر دکھایا جس کا آج تک ہر سائنسی اور فلسفی محفل میں ذکر کیا جاتا ہے۔

(Visited 1 times, 1 visits today)
Tags
Back to top button
Close