دلچسپ و عجیب

فیس ماسک پہننے کی خلاف ورزی پر موت کی سزا

جکارتہ میں جوشہری بغیرفیس ماسک کےپکڑا جائےتو اسےجرمانہ ادا کرنےاورتابوت میں لیٹنے میں سے کسی ایک سزا کا انتخاب کرنے کا کا کہا جاتا ہے

انڈونیشیا کےدارالحکومت میں کورونا وبا کی روک تھام کےلیےعوامی مقامات پرفیس ماسک پہننےکی خلاف ورزی کرنےوالوں کوموت کی ہولناکی کا مزہ چکھانےکےلیےتابوت میں لیٹنےکی انوکھی سزا دی جارہی ہے۔ مقامی اخبارکےمطابق جکارتہ میں جوشہری بغیرفیس ماسک کےپکڑا جائےتواسےجرمانہ ادا کرنےاورتابوت میں لیٹنےمیں سےکسی ایک سزا کا انتخاب کرنےکا کہا جاتا ہے۔ سزا کا آغاز 3 ستمبرکوکیا گیا تھا اوراسی روزمتعدد افراد نےفیس ماسک نہ پہننے پر  1 منٹ تک تابوت میں لیٹنےکی سزا کا انتخاب کیا۔

اخبارکےمطابق خلاف ورزی کرنےوالےکوایسےتابوت میں لٹایا جاتا ہےجسےاوپرسے کھلا رکھا جاتا ہے۔ اس سزا کوتجویزکرنےکا مقصد یہ ہے کہ وبا میں لاپروائی کرنےوالوں کوشاید اسی طرح موت کی قربت کا احساس ہوجائے۔ واضح رہےکہ اس وقت دنیا کےمختلف خطوں میں کورونا وائرس کی روک تھام کےحوالےسےمختلف صورت حال پائی جاتی ہے۔ اگرچہ براعظم ایشیا میں اس کےپھیلاؤ کی رفتارکم ہوگئ ہے تاہم گزشتہ دنوں ایشیا میں کورونا سےہلاکتوں کی تعداد 1  لاکھ سے تجاوزکرچکی ہے۔

Back to top button