دلچسپ و عجیب

پندرہویں صدی کےاطالوی پینٹرکا شاہکارکتنےمیں فروخت ہوا؟

معروف مصورسیندروبوتیچیلی کےہاتھوں سےبنا ایک شاہکار 9 کروڑ 22 لاکھ امریکی ڈالرمیں فروخت ہوگیا

پندرہویں صدی کے معروف مصور سیندرو بوتیچیلی کے ہاتھوں سے بنا ایک شاہکار 9 کروڑ 22 لاکھ امریکی ڈالر میں فروخت ہوگیا۔ غیر ملکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق یہ کسی بھی اطالوی پینٹر کی بنائی گئی اب تک کی سب سے مہنگی پینٹنگ ہے۔ رپورٹس کے مطابق یہ سیندرو بوتیچیلی کی 5 صدیوں بعد بھی موجود درجن بھر پینٹنگز میں سے ایک ہے۔  مذکورہ پینٹنگ فروخت کے لیے نیویارک میں سوتھیبی نیلام گھر میں پیش کی گئی جس کا نام ’ینگ مین ہولڈنگ راؤنڈیل‘ ہے۔

’برتھ آف وینس‘ اور ’پریماویرا‘ نامی مشہور زمانہ پینٹنگز بھی سیندرو بوتیچیلی نے بنائی تھیں جو اس وقت اٹلی کے شہر فلورینس میں قائم میوزیم کی افیسی گیلری میں نمائش کے لیے نصب ہیں۔  اس حوالے سے نیلام گھر کا کہنا تھا کہ یہ کسی بھی نیلامی کے لیے رکھی گئی کسی بھی زمانے کا سب سے اہم اور قابلِ قدر پورٹریٹ ہے۔  انھوں نے بتایا کہ یہ پینٹنگ نیلامی میں 9 کروڑ 22 لاکھ امریکی ڈالر (تقریباً 14 ارب 77 کروڑ روپے سے زائد) میں فروخت ہوئی ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button