دلچسپ و عجیب

دل کے مریض بچے کی خاطر اولمپکس کا تمغہ فروخت کر دیا

پولینڈ سے تعلق رکھنے والی خاتون کھلاڑی نے دل کے عارضے میں مبتلا بچے کے علاج کی خاطر اپنا ٹوکیو اولمپکس میں جیتا گیا کانسی کا تمغہ فروخت کر دیا۔

ماریہ آندرجیک کے لیے ٹوکیو اولمپکس میں جیولین تھرو کے مقابلوں میں جیتا گیا چاندی کا تمغہ اہم نہیں تھا۔ ماریہ نے دل کے عارضے میں مبتلا8 ماہ کے بچے کے علاج کیلئے اپنا چاندی کا تمغہ فروخت کرنے کا فیصلہ کیا۔انہوں نے فیس بک پر لکھا کہ پولینڈ کی سپر مارکیٹ چین ’ابکا‘ نے ایک لاکھ 25 ہزارڈالر کی بولی کے ساتھ تمغے کی یہ نیلامی جیت لی ہے۔ تمغے کی فروخت سے جمع کی گئی رقم سے بچے کو سٹینفورڈ یونیورسٹی میڈیکل سینٹر میں ضروری سرجری کروانے میں مدد ملے گی۔

اس نے لکھا کہ وہ اپنا تمغہ دے رہی تھی”جو میرے لیے جدوجہد ، ایمان اور کئی مشکلات کے باوجود خوابوں کے حصول کی علامت ہے۔”

بعد ازاں صورت حال اس وقت دلچسپ ہوگئی جب’ابکا‘ نے وہی میڈل واپس آندرجیک کو دینے کا فیصلہ کیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.