دلچسپ و عجیب

گہرے سمندر میں دنیا کا آٹھواں عجوبہ دریافت

پولینڈ کے غوطہ خوروں نے گہرے سمندر میں دنیا کا آٹھواں عجوبہ دریافت کر لیا ہے جسے باہر نکالنے کی کوششیں شروع کر دی گئی ہیں۔

پولینڈ کے غوطہ خوروں نے دوسری جنگ عظیم میں سمندر برد ہوجانے والے دنیا کے آٹھویں عجوبے کو دریافت کیا۔اٹھارہویں صدی میں پروشیا جو ماضی میں یورپ کی ایک مملکت تھی، میں تیار ہونے والے جواہرات سے جڑے ’ عنبر روم‘ کو روس کے سینٹ پیٹرس برگ کے نزدیک  کیتھرائن محل میں نصب کیا گیا تھا تاہم دوسری جنگ کے دوران نازی فوج اسے ٹکڑے ٹکڑے کرکے کوئنسبرگ شہر لے گئی، جس کے بعد یہ غائب ہوگیا تھا اور اب تک اس کی گمشدگی ایک معمہ بنی ہوئی تھی۔

گزشتہ سال پولینڈ سے تعلق رکھنے والے شوقیہ غوطہ خوروں کی ایک ٹیم نے بحیرہ بالٹک کی تہہ میں موجود ایک جہاز کے ملبے میں جواہرات سے مزین اس کمرے کی موجودگی کا شبہ ظاہر کیا تھا۔

ان غوطہ خوروں کو پولینڈ کے ساحلی شہر استکا سے 70 کلومیٹر فاصلے پر اپریل 1945 میں ڈوبنے والے جہاز کا ملبہ ملا تھا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.