شوبز

علی ظفر کے خلاف مہم؛2 ملزمان کی ضمانت منظور؛عفت عمر کی گرفتاری ٹل گئی

لاہور کی سیشن کورٹ نے گلوکار و اداکار علی ظفر کے خلاف سوشل میڈیا پر چلنے والی مذموم مہم میں ملوث ہونے پر دائر مقدمے میں مزید 2 ملزمان کی عبوری ضمانت منظور کرلی۔

ایف آئی اے کے سائبر کرائم ونگ نے 28 ستمبر کو علی ظفر کے خلاف مذموم مہم میں مبینہ طور پر ملوث ہونے پر گلوکارہ میشا شفیع اور دیگر 8 افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا۔

پریوینشن آف الیکٹرانک کرائمز ایکٹ (پیکا) 2016 کے سیکشن (1) 20 اور پاکستان پینل کوڈ کے آر/ڈبلیو 109 کے تحت میشا شفیع، اداکارہ و میزبان عفت عمر، لینیٰ غنی، فریحہ ایوب، ماہم جاوید، علی گل، حزیم الزمان خان، حمنہ رضا اور سید فیضان رضا کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ایڈیشنل سیشن جج حامد حسین نے اداکارہ میشا شفیع کے مینیجر سید فیضان رضا اور لینیٰ غنی کی عبوری ضمانت منظور کرلی۔اس کے ساتھ ہی لاہور کی سیشن کورٹ نے 12 اکتوبر تک ایف آئی اے کو عفت عمر کی گرفتاری سے روک دیا۔عدالت نے دونوں ملزمان کو شامل تفتیش ہونے کا حکم دے دیا اور آئندہ سماعت پر وفاقی تحقیقاتی ادارے سے ملزمان کے مقدمے کا مکمل ریکارڈ بھی طلب کرلیا۔

ایڈیشنل سیشن جج حامد حسین نے 50 ہزار روپے کے مچلکوں کے عوض اداکارہ عفت عمر کی درخواست ضمانت منظور کی تھی۔

Back to top button