شوبز

الحمرا آرٹس کونسل کے لائیو پروگرام”روشن ستارے“ میں ایمان عقیل عباسی کی شرکت

چیئرپرسن بورڈ آف گورنز لاہور آرٹس کونسل الحمرا منیزہ ہاشمی نے کہا کہ اعلی کارکردگی کا مظاہر ہ کرنے والے نوجوانوں کی حوصلہ افزائی کرنے کے لئے ”روشن ستارے“ کا آغاز کیا جو کامیابی سے جاری ہے،پاکستانی نوجوان بے پناہ صلاحیتوں کے مالک ہیں،دنیا بھر میں اپنے آپ کو منوا رہے ہیں،ان کی حوصلہ افزائی کرنے سے انہیں اور آگے بڑھنے کا جذبہ ملتا ہے یہی الحمرا آرٹس کونسل کے سلسلہ وار جاری پروگرام”روشن ستارے“ کا مقصد ہے۔

الحمرا آرٹس کونسل کے لائیو پروگرام”روشن ستارے“ کی میزبان سمیرا خلیل نے مختصر وقت میں ابھرتی ناول نگار ایمان عقیل عباسی کے ساتھ گفتگو میں ان تمام پہلوؤں کا احاطہ کیا جس سے سننے والے نوجوانوں میں بھی جدوجہد کرنے کا عزم پیدا ہوا۔چھوٹی عمر ہی میں ادب کے میدان میں بڑے کارنامے سرانجام دینے والی ایمان عقیل عباسی نے اپنی زندگی کو بے حد خوبصورت پیرائے میں بیان کرتے ہوئے کہا کہ ابتدائی ایام ہی سے والدین نے میری تربیت پر توجہ دی،مجھے میری صلاحیتوں کو جاننے میں مدد دی،لکھنے پڑھنے میں حوصلہ دیا،مطالعہ کی عادت سے خود سے لکھنے کا شوق پیدا ہوا۔انھوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ خواب دیکھنا اور ان کی تکمیل کیلئے انتھک محنت کرنا کامیابی کو یقینی بناتا ہے،اپنے اساتذہ سے حوصلہ افزائی ملی،میری والدہ میر ی نقاد ہیں،اپنی خامیوں کو بے حد محنت کے ذریعے کے خوبیوں میں بدلا جا سکتا ہے،پڑھنے لکھنے کے ساتھ ساتھ غیر نصابی سرگرمیاں آپکو اپنی ذات کی تعمیر و ترقی میں مدد فراہم کرتی ہیں،ناول لکھنے کامقصد لوگوں کو توجہ اہم موضوعات کی جانب مبذول کروانا ہے،بین الاقومی سطح پر سفر کرنا کا تجربہ بہت اچھا رہا،اپنے گردونواح پر نظر رکھتی ہوں،پاکستان ہر طرح کے وسائل سے مالامال ہے۔اپنے ناولوں سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ میری کہانیوں کے کردار حقیقی ہوتے ہیں۔پروگرام کو ناظرین کی بڑی تعدادنے الحمرا کے فیس بک پیج پر براہ راست دیکھا اور بے حد پسند کیا۔نئی ابھرتی ناول نگار ایمان عقیل عباسی نے پروگرام میں اپنے ناولوں سے اقتسابات پڑھے،شاعری سنائی اور فیض احمد فیض کی شاعری بھی گائی۔الحمرا آرٹس کونسل کا یہ سلسلہ آئندہ بھی جاری رہے گا۔

Back to top button