شوبز

سعودی عرب نے سرکاری سرپرستی میں”ناچ گانے” کے لائسنس جاری کر دیئے

سعودی عرب کی حکومت نے پہلی بار ملک میں موسیقی، تھیٹر اداکاری، پرفارمنگ آرٹ، فیشن، ادب اور میوزیم سمیت فنون لطیفہ کے دیگر شعبہ جات کی تربیت فراہم کرنے کے لیے 2 اداروں کو باضابطہ طور پر لائسنس جاری کردیے۔

اگرچہ سعودی عرب میں کئی لوگ سالوں سے گلوکاری، اداکاری، فیشن اور پرفارمنگ آرٹ میں فن کا مظاہرہ کرتے آ رہے ہیں، تاہم چند سال قبل ہی انہیں حکومتی سطح پر باضابطہ طور پر اس کام کی اجازت دی گئی ہے۔پانچ سال قبل سعودی عرب میں حکومتی سطح پر میوزک، تھیٹر، فیشن اور فنون لطیفہ کے دیگر شعبہ جات کے پروگرامات کو عوامی سطح پر منعقد کرنا نہ صرف جرم تھا بلکہ اسے معیوب بھی سمجھا جاتا تھا۔تاہم گزشتہ 5 سال میں سعودی عرب میں نمایاں تبدیلیاں متعارف کرائی گئی ہیں اور اب وہاں پر نہ صرف اداکاری، فیشن اور گلوکاری کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے بلکہ اب وہاں خواتین کو غیر محرم مرد حضرات کے ساتھ بھی ان شعبوں میں پرفارمنگ کرنے کی اجازت دی گئی ہے۔

اسی سلسلے کے تحت اب سعودی عرب کی وزارت ثقافت نے 2 مختلف اداروں کو موسیقی، تھیٹر، پرفارمنگ آرٹ، میوزیم اور فیشن سمیت اسی طرح کے دیگر شعبوں کی تربیت فراہم کرنے کے لیے باضابطہ طور پر لائسنس جاری کردیے۔

متعلقہ خبریں