شوبز

خواتین کوعریانی پرمجبورکرنےکا الزام؟عائشہ عمر نےسچائی بتادی

لکس اسٹائل ایوارڈز 2020 کی تقریب  میں عائشہ عمرسمیت دیگرخواتین کےریڈ کارپٹ اندازکوبھی دکھایا گیا تھا

سوشل میڈیا کےاس دورمیں شوبزشخصیات اورخصوصی طورپرخواتین آئےدن کسی نہ کسی وجہ سےتنقید کا نشانہ بنتی رہتی ہیں۔ اورحال ہی میں اداکارہ عائشہ عمرکےساتھ بھی ایسا ہی ہوا،جب انہوں نےسال 2020 کےاختتامی دن پرہونےوالےلکس اسٹائل ایوارڈزکی ورچوئل تقریب کےلیےمنفرد لباس پہنا۔ لکس اسٹائل ایوارڈز 2020 کی تقریب اس بارکورونا کی وجہ سےورچوئل منعقد کی گئی تھی اورتقریب میں عائشہ عمرسمیت دیگرخواتین کےریڈ کارپٹ اندازکوبھی دکھایا گیا تھا۔ عائشہ عمرنےبعد ازاں اپنےلباس کی تصویرانسٹاگرام پرشیئرکرتےہوئےبتایا تھا کہ انہیں مذکورہ لباس فیشن کی دنیا میں قدم رکھنےوالی دونئی لڑکیوں نےتحفےکےطورپردیا تھا۔

عائشہ عمرنےمذکورہ لباس کےساتھ مختصرویڈیوشیئرکرتےہوئےسال 2020 کوایک منفرد سال قراردیا اورلکھا کہ اس میں بہت سارے لوگوں نےاپنےپیارے کھوئےاورکئی لوگ بیماری کی وجہ سےاپنےپیاروں سےدوررہےجب کہ کئی لوگوں کا روزگارختم ہوا۔ اداکارہ کی جانب سے مذکورہ ویڈیوشیئرکیےجانےکےبعد انہیں بولڈ لباس پہننےپرتنقید کا نشانہ بناتےہوئےان پرالزام عائد کیا گیا کہ وہ خواتین کومختصرلباس پہننے کی ترغیب دے رہی ہیں۔

ایک مداح نےان کی پوسٹ پرکمنٹ کرتےہوئےاداکارہ پرالزام لگایا کہ وہ بولڈ لباس پہن کرخواتین کوترغیب دے رہی ہیں کہ خواتین اپنا جسم دکھائیں اوراس عمل کوخواتین کی خودمختاری سےجوڑا جا رہا ہے۔ مداح کےکمنٹ پرعائشہ عمرنےتفصیلی جواب دیتےہوئےالزام کومسترد کیا اورلکھا کہ وہ خواتین کومختصرلباس پہننےکی ترغیب نہیں دے رہیں اورنہ ہی وہ خواتین کویہ بتا رہی ہیں کہ انہیں کس طرح کا لباس پہننا چاہیے۔

 

اداکارہ نےتنقید کرنےوالےمداح کوجواب دیا کہ خواتین کی مرضی ہےکہ وہ کس طرح کا لباس پہنیں اورانہوں نےبھی اپنی مرضی کےمطابق یہ لباس پہنا ہے، اس میں دوسروں کومسئلہ نہیں ہونا چاہیے۔ اداکارہ نےمذکورہ بولڈ لباس پروضاحت کی کہ یہ لباس انہیں دوانجان خواتین نے بھجوایا تھا، جنہوں نےان سے جون 2020 میں رابطہ کرکےصرف ان سےلباس کا سائزلیا تھا لیکن جب انہیں لباس ملا تووہ ایسا تھا جوویڈیو میں نظرآرہا ہے۔ انہوں نےواضح کیا کہ انہوں نےپیسوں کی خاطریہ لباس نہیں پہنا اورنہ ہی مذکورہ لباس کسی تشہیرکا حصہ ہے۔

 

متعلقہ خبریں