شوبز

اداکارہ ڈیمی لواٹو کی زندگی اورموت کےدرمان 10 منٹ کا فاصلہ

ابتدائی طورپریہ خبریں بھی سامنےآئی تھیں کہ انہیں ساتھی ڈانسرزوگلوکاراؤں نےحد سےزیادہ نشہ دیا تھا

امریکی اداکارہ، گلوکارہ ونغمہ نگار 28 سالہ ڈیمی لواٹو نےانکشاف کیا ہےکہ 2018 میں جب وہ حد سےزیادہ منشیات استعمال کرنےکی وجہ سےبےہوش ہوگئی تھیں،تب ڈاکٹرزنےان کےلیےکہا تھا کہ وہ بس مزید 5 منٹ تک زندہ رہیں گی۔ ڈیمی لواٹوکوجولائی 2018میں امریکا میں اپنی رہائش گاہ پربےہوشی کی حالت میں پایا گیا تھا اورانہیں تشویش ناک حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا تھا۔ ڈیمی لواٹو 2 سے 4 ہفتوں تک ہسپتال میں رہی تھیں اورابتدائی 4 دن تک وہ غنودگی کی حالت میں تھیں اورانہیں شدید بخار،الٹیاں اوربارباربےہوشی کےدورے پڑرہےتھے۔

ابتدائی طورپریہ خبریں بھی سامنےآئی تھیں کہ انہیں ساتھی ڈانسرزوگلوکاراؤں نےحد سےزیادہ نشہ دیا تھا، تاہم بعد ازاں گلوکارہ نےخود اعتراف کیا تھا کہ وہ چند سال سےنشےکرنےکی عادی ہیں۔ ہسپتال سےڈسچارج کیےجانےکےبعد ڈیمی لواٹوکوبحالی سینٹرمیں رکھا گیا تھا اور وہ چند ماہ تک موسیقی وشوبزکی دنیا سےدورتھیں اورگزشتہ برس پہلی بارانہوں نےموسیقی کی دنیا میں دوبارہ قدم رکھا تھا۔

ڈیمی لواٹو کی ذاتی زندگی پر بنائی گئی دستاویزی فلم آئندہ ماہ ریلیز کی جائے گی—اسکرین شاٹ

جس وقت جولائی 2018 میں ڈیمی لواٹوکوہسپتال منتقل کیا گیا تھا اوروہ چاردن تک بےہوشی کی حالت میں تھیں،تب زیادہ ترشوبزشخصیات کولگ رہا تھا کہ وہ بچ نہیں پائیں گی۔ اوراب خود انہوں نےاس وقت کی اپنی صحت سمیت زندگی کےتمام مسائل پرپہلی بارکھل کربات کی۔ خبر رساں ادارے کےمطابق ڈیمی لواٹوکی جلد ریلیزہونےوالی دستاویزی فلم ’ڈانسنگ ود ایول‘ کا ٹریلرجاری کردیا گیا،جسےآئندہ ماہ 23 مارچ کوریلیزکردیا جائےگا۔ تین منٹ سےکم دورانیےکےٹریلرمیں ڈیمی لواٹوسمیت متعدد گلوکاروں،موسیقاروں،اداکاراؤں اوران کےقریبی افراد کو بھی ان کی زندگی پربات کرتےہوئےدکھایا گیا ہے۔

دستاویزی فلم کے ٹریلر میں ڈیمی لواٹو کو بے ہوشی کی حالت میں ہسپتال منتقل کیے جانے سمیت میڈیا کی خبریں بھی دکھائی گئی ہیں اور ان کی صحت پر تبصرہ کرنے والے افراد کو بھی دکھایا گیا ہے۔ ٹریلر میں ڈیمی لواٹو بچپن سے خود کو پیش آنے والے طبی مسائل پر بات کرتی دکھائی دیں اور ساتھ ہی انہوں نے 2018 میں بے ہوشی کی حالت میں ہسپتال منتقل کیے جانے کے معاملے پر بھی کھل کر بات کی۔ ڈیمی لواٹو نے مختصر ٹریلر میں بتایا کہ جب انہیں جولائی 2018 میں بے ہوشی کی حالت میں ہسپتال لے جایا گیا تھا، تب انہیں دوران علاج ایک دل کا دورہ پرا تھا جب کہ ان پرتین فالج کے اور دماغ کا ایک حملہ بھی ہوا تھا۔

ڈیمی لواٹو نے بتایا کہ انہیں ڈاکٹرز کی جانب سے مطلع کیا گیا تھا کہ گلوکارہ کے پاس زندہ رہنے کے لیے مزید 5 سے 10 منٹ ہیں۔ ٹریلر میں گلوکارہ نے بتایا کہ وہ موت کے منہ سے بچ نکلیں اور انہوں نے دوبارہ زندگی کو جینا شروع کیا اور اب ان کی منگنی ہوچکی ہے، تاہم ساتھ ہی وہ انگوٹھی کو دیکھتے ہوئے خاموش بھی ہوگئیں۔ ڈیمی لواٹو نے صحت یابی کے بعد جولائی 2020 میں دیرینہ بوائے فرینڈ میکس ارچ سے منگنی کی تھی، تاہم دونوں کی منگنی محض دو ماہ بعد ستمبر 2020 ہی ختم ہوگئی تھی۔ ڈیمی لواٹو نے منگنی ختم کرنے کے حوالے سے واضح طور پر کوئی بیان نہیں دیا تھا، تاہم اب خیال کیا جا رہا ہے کہ 23 مارچ کو ریلیز ہونے والی دستاویزی فلم میں وہ اس پر بھی کھل کر بات کریں گی۔

ڈیمی لواٹو نے گزشتہ برس جولائی میں منگنی کی تھی مگر ستمبر 2020 میں ان کی منگنی ٹوٹ گئی تھی—فائل فوٹو؛۔ اے پی

ڈیمی لواٹو ماضی میں ہی اعتراف کر چکی ہیں کہ انہوں نے انتہائی کم عمری یعنی 17 برس کی عمر سے ’کوکین‘ سمیت دیگر نشے کا استعمال کردیا تھا اور انہیں 18 برس کی عمر میں ہی بحالی سینٹر بھیجا گیا تھا۔ گلوکارہ ماضی میں ہی کہہ چکی ہیں کہ بچپن کے واقعات کی وجہ سے انہیں نشے کی لت لگی اور بعض اوقات وہ بیک وقت متعدد نشوں کا استعمال بھی کرتی رہی ہیں، جس وجہ سے ان کی زندگی ختم ہوتے ہوتے بھی بچی ہے۔

خیال رہے کہ ڈیمی لواٹو نے بطور چائلڈ آرٹسٹ ہی اپنا کیریئر شروع کیا، انہوں نے پہلے پہل ٹیلی وژن پر اداکاری کی، بعد ازاں انہوں نے گلوکاری اور شاعری میں بھی قسمت آزمائی۔ اب تک ڈیمی لواٹو 9 سے زائد فلموں اور 2 درجن سے زائد ڈراموں بھی اداکاری کے جوہر دکھا چکی ہیں۔ ڈیمی لواٹو اب تک 6 میوزک ایلبم ریلیز کرنے سمیت درجنوں گانے بھی ریلیز کر چکی ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button