شوبز

اور اب "ارطغرل غازی”۔۔۔۔ پشتو میں بھی

 ترکی کے تاریخی ڈرامے ‘دیریلیش ارطغرل’ کے پشتو ورژن کا پہلا سیزن عیدالفطر کے بعد ریلیز کیا جائے گا۔

دیریلیش ارطغرل کا یہ پشتو ورژن سوات میں مقیم یوٹیوبرز کی جانب سے ریلیز کیا جائے گا۔ان نوجوان یوٹیوبرز کو تعلق سوات کے تاریخی قصبے اوڈیگرام سے اور انہوں نے کہا کہ وہ پاکستان ٹیلی ویژن پر اردو زبان میں ارطغرل غازی کی پیشکش کے بعد ترک تاریخی سیریز سے متاثر ہوئے تھے۔

وہ ان دنوں وادی سوات میں مختلف مقامات پر شوٹنگ کررہے ہیں، جس میں زیادہ تر مناظر ساتویں صدی کا آثار قدیمہ کے مقام قلعہ راجا گیرا اور گیارہویں صدی کی محمود غزنوی مسجد میں فلمائے جارہے ہیں، دونوں ہی قصبہ اوڈیگرام میں واقع ہیں۔

اس پشتو ورژن میں ارطغرل غازی کا کردار ادا کرنے والے محمد عباس، اس ڈرامے کے پروڈیوسر بھی ہیں۔وہ گورنمنٹ پوسٹ گریجویٹ جہانزیب کالج میں بی ایس ریاضی کی تعلیم حاصل کررہے ہیں، انہوں نے کہا کہ جب انہوں نے اور ان کے دوستوں نے کورونا وائرس کی پہلی لہر کے دوران ترک سیریز دیکھی تو وہ کہانی سے بہت متاثر ہوئے۔انہوں نے  بتایا کہ ‘اس نے ہمیں اتنا متاثر کیا کہ ہم نے اپنے وسائل سے پشتو زبان میں سیریز کا ری میک بنانے کا فیصلہ کیا’۔محمد عباس نے مزید کہا کہ انہوں نے اپنی جمع پونجی اکٹھی کی اور لکڑی کی تلواریں، کلہاڑیاں، ڈھالوں کے ساتھ ساتھ کم لاگت کی جیکٹس بھی بنائیں لیکن وہ پائیدار نہیں تھیں۔

 

بعدازاں انہوں نے اصل ترک سیریز میں استعمال کی گئی لوہے کی تلواروں اور چمڑے کی جیکٹس کی نقول بنائیں۔انہوں نے بتایا کہ ‘میں نے اسکول کے بعد درزی کے طو پر بھی کام کیا لہذا میں جیکٹس سینے کا طریقہ جانتا ہوں اب ہم کپڑے بنانے میں ایسے ماہر ہیں کہ ہمیں ملک کے مختلف حصوں سے آرڈر ملتے ہیں’۔محمد عباس نے کہ بتایا کہ ‘وہ ہر جمعے کو سینز کی شوٹنگ کرتے ہیں جو ان کی سیر کا دن ہوتا ہے’۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ‘ہم پیسے جمع کرتے ہیں اور شوٹنگ کے دن کے لیے بریانی یا دیگر ڈشز کا انتظام کرتے ہیں لہذا ہم سینز شوٹ کرتے ہیں اور لطف اٹھاتے ہیں’۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads. because we hate them too.