شوبزفیچرڈ پوسٹ

برصغیر کے لیجنڈ اداکار دلیپ کمار نے انگریزوں کی غلامی کیوں کی؟ وہ انگریزوں کے لئے کیا کام کرتے رہے؟ ماضی کے جھروکوں سے چونکا دینے والی رپورٹ منظر عام پر

برطانوی مخالف تقریر کے لیے مجھے جیل بھیج دیا گیا جہاں بہت سے مجاہدین آزادی قید تھے'۔ 'اس وقت ستیہ گرہیوں کو گاندھی والا کہا جاتا تھا

برصغیر کے لیجنڈ اداکار دلیپ کمار نے انگریزوں کی غلامی کیوں کی؟ وہ انگریزوں کے لئے کیا کام کرتے رہے؟ ماضی کے جھروکوں سے چونکا دینے والی رپورٹ منظر عام پر آگئی۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق بالی ووڈ کے مشہور اداکار دلیپ کمار کو سانس لینے میں کچھ دشواری کے بعد ہسپتال میں داخل کرایا دیا گیا جس کے بعد سوشل میڈیا پر انکی طبیعت بگڑنے کی افواہیں گردش کرنے لگیں لیکن اتوار کے روز دلیپ کمار کی اہلیہ سائرہ بانو نے ایک ٹوئٹ کے ذریعہ صورتحال واضح کردی۔ انھوں نے لکھا ‘واٹس ایپ پر شیئر ہونے والی افواہوں پر یقین نہ کریں۔ صاحب (دلیپ کمار)ٹھیک ہیں، ان کی طبیعت بہترہے۔ دعاؤں کے لیے آپ سب کا شکریہ، ڈاکٹروں کے مطابق وہ دو یا تین دن میں گھر آجائیں گے۔’

اس سے قبل انھوں نے لکھا تھا کہ دلیپ صاحب کو روٹین چیک اپ کے لیے ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ پچھلے کئی دنوں سے انھیں سانس لینے میں دشواری تھی۔ ڈاکٹر ان کی دیکھ بھال کر رہے ہیں، ان کے لیے دعا کریں۔ بطور اداکار دلیپ کمار کے بارے میں بے شمار قصے کہانیاں موجود ہیں لیکن اداکاری سے دور ان کی اصل زندگی سے متعلق بہت سی دلچسپ کہانیاں ہیں۔

40 کی دہائی میں فلموں میں آنے سے پہلے دلیپ کمار پیسہ کمانے کا ذریعہ تلاش کر رہے تھے۔ ایک بار وہ گھر سے لڑ کر ممبئی سے بھاگ کر پونے چلے گئے اوربرٹش آرمی کینٹین میں کام کرنے لگے۔ کینٹین میں ان کے تیار کردہ سینڈوچ کافی مشہور تھے۔ یہ آزادی سے پہلے کا دور تھا اور اس ملک پر انگریزوں کا راج تھا۔ دلیپ کمار نے ایک دن پونے میں تقریر کی کہ انڈیا کی آزادی کی جنگ جائز ہے اور برطانوی حکمران غلط ہیں۔

دلیپ کمار اپنی کتاب ‘دلیپ کمار، دی سبسٹینس اینڈ دی شیڈو’ میں لکھتے ہیں ‘پھر کیا تھا برطانوی مخالف تقریر کے لیے مجھے جیل بھیج دیا گیا جہاں بہت سے مجاہدین آزادی قید تھے’۔ ‘اس وقت ستیہ گرہیوں کو گاندھی والا کہا جاتا تھا۔ میں دوسرے قیدیوں کی حمایت میں بھوک ہڑتال پر بھی بیٹھا تھا۔ صبح جب میری جان پہچان کا ایک میجر آیا تو مجھے جیل سے رہا کیا گیا۔ میں بھی گاندھی والا بن گیا تھا۔’

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.