شوبز

بچوں کے بارے میں ابرار الحق کے بیان پر ہنگامہ کھڑا ہوگیا

گلوکار اور پاکستان تحریک انصاف  کے رہنما ابرار الحق کے  جدید دور کی ماؤں کی جانب سے اسمارٹ فونز پر نرسری رائمز nursery rhymes سنا کر بچوں کی تربیت کے انداز اور تنقید نے سوشل میڈیا پر بحث چھیڑ دی۔

سوشل میڈیا پر ابرارالحق کا ایک ویڈیو کلپ وائرل ہو رہا ہے جس میں وہ اسلام آباد میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔سوشل میڈیا پر "بے بی شارک ڈو ڈو ڈو” کے چرچے ہورہے ہیں، کسی نے حمایت کی اور سراہا، تو کسی نے آڑے ہاتھوں لے لیا۔

کسی نے بچوں کی نظموں کے تعمیری پہلوؤں پر زور دیا، تو کسی نے خود ابرار الحق کے ماضی کے گانوں کے بول یاد کروادیے، منچلوں نے ابرار الحق سے نظم کا پنجابی بھنگڑا، ورژن ریلیز کرنے کا مطالبہ کردیا۔

ابرار الحق کا کہنا تھا کہ ماضی میں مائیں بچوں کو کلمہ سکھاتی تھی، آج فون دے دیتی ہیں جس پر بچے "بے بی شارک” پر جھومتے ہیں۔

ایک خاتون کا کہنا تھا کہ”نچ پنجابن” اور "بلو دے گھر” جیسے گانے گانے والے آج ماؤں کو اس بات پر شرمندہ کر رہے ہیں کہ بے بی شارک جیسی نظمیں سنا کر وہ اپنے بچوں کی اخلاقی پستی کی ذمہ دار ہیں۔

ایک صاحب کا کہنا تھا کہ کلمہ اور نرسری نظمیں ایک دوسرے کا نعم البدل نہیں، آپ بچوں کو کلمہ بھی سکھا سکتے ہیں اور نرسری نظمیں بھی۔

کئی افراد کا کہنا تھا کہ نرسری نظمیں تو بچوں کو آج سے نہیں ہمیشہ سے سکھائی جارہی ہیں، ہمٹی ڈمپٹی، ٹوٹ بٹوٹ جیسے کردار بچوں کی تخیلاتی تصوراتی دنیا میں رنگ بھر کر انہیں دلچسپی سے سیکھنے پر راغب کرتے ہیں، جبکہ ان ہی کرداروں کی مدد سے کہیں بچوں کو گنتی، حروف تہجی، سبزیوں پھلوں کے نام، تو کہیں جانوروں کی آوازیں سکھائی جاتی ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.