شوبز

قابل اعتراض موضوع کی وجہ سے فلم ’لائٹ ایئر‘ پر 14 ممالک میں پابندی

چین، سعودی عرب، متحدہ عرب امارات (یو اے ای)، مصر، انڈونیشیا، ملائیشیا اور لبنان سمیت کم از کم 14 ممالک نے ہم جنس پرست جوڑا دکھانے پر ڈزنی پکسر کی جلد ریلیز ہونے والی اینیمیٹڈ فلم ’لائٹ ایئر‘ پر پابندی عائد کردی۔

دنیا بھر میں 16 جون کو ریلیز ہونے والی اینیمیٹڈ ایڈونچر ایکشن فلم ’لائٹ ایئر‘ کے مناظر اور کہانی پر چینی عہدیداروں نے بھی برہمی کا اظہار کرتے ہوئے فلم کی ٹیم سے نامناسب مناظر کو نکالنے کا حکم دیا ہے، جس پر فلم کی ٹیم نے فوری طور پر انکار کردیا۔چینی عہدیداروں نے واضح طور پر ’لائٹ ایئر‘ پر پابندی عائد نہیں کی، تاہم بتایا ہے کہ ہم جنس پرستی کے مناظر دکھائے جانے کی وجہ سے اس کی عام نمائش نہیں کی جا سکتی، مذکورہ مناظر حکومت کی پالیسی کے خلاف ہیں۔چین کے علاوہ متحدہ عرب امارات کی حکومت نے بھی واضح طور پر فلم کی نمائش پر پابندی عائد کردی اور اس میں دکھائے گئے مناظر کو حکومتی پالیسی کے خلاف قرار دیا۔

یو اے ای کے حکام نے فلم میں ہم جنس پرستی کے مناظر کی واضح مخالفت نہیں کی، تاہم فلم کے مناظر کو حکومتی پالیسی اور سماجی اقدار کے خلاف قرار دیا۔

متحدہ عرب امارات کی طرح سعودی عرب، لبنان، مصر، انڈونیشیا اور ملائیشیا سمیت دیگر مشرق وسطی ممالک نے بھی ’لائٹ ایئر‘ کی نمائش پر پابندی عائد کردی، تاہم مذکورہ ممالک نے واضح طور پر فلم پر پابندی کے حوالے سے اعلان نہیں کیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.