شوبز

"بس بہت ہوگیا”۔۔۔ ثروت گیلانی کا ڈراموں میں کام سے انکار

ثروت گیلانی نے مداحوں کو  ٹیلی ویژن اسکرین سے دور ہونے کی وجہ بتادی۔

ایک انٹرویو کے دوران ثروت گیلانی نے کہا کہ وقت کے ساتھ ساتھ میں خواتین کے حقوق، بچوں کے ساتھ بدسلوکی اور حقیقی زندگی کے بہت سے دیگر سنجیدہ موضوعات کے خلاف بات کرنے لگی ہوں جس کے سبب میں نے محسوس کیا کہ اگر میں اس کے بارے میں بات کر رہی ہوں اور مجھے یقین ہے کہ کچھ مخصوص چیزیں ہیں جن پر ہمارے معاشرے میں عمل کی ضرورت ہے تو میں دوبارہ مظلوم سسکتی عورت کے کردار میں واپس نہیں آسکتی کیونکہ میں اس پر یقین نہیں رکھتی۔انہوں نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ پاکستان میں بےشمار غیرمعمولی خواتین ہیں، ایسی بہت سی خواتین کی مثالیں موجود ہیں اور ہمیں ان کی کامیابی کی کہانیاں پیش کرنے کی ضرورت ہے۔

اداکارہ کا کہنا تھا کہ پورے سیزن یا 26 اقساط پر مشتمل سیریل کی بنیاد صرف ان باتوں پر نہیں ہونی چاہیے کہ فلاں لڑکی فلاں لڑکے سے شادی کے لیے مناسب ہے یا نہیں؟ کیا وہ اتنی اچھی ہے کہ سسرال والوں کی جانب سے اسے قبول کرلیا جائے؟ زندگی ان تمام چیزوں سے بالاتر ہے، خاص طور پر خواتین کے لیے جو ان دقیانوسی تصورات سے باہر نکلنے کے لیے غیرمعمولی جدوجہد کررہی ہیں۔

ثروت گیلانی نے کہا کہ اس تناظر میں میرا خیال ہے کہ ٹیلی ویژن مجھے روکتا ہے، میں نے 20 سال ڈرامہ انڈسٹری میں کام کیا اور مظلوم سسکتی عورت کے کردار بھی ادا کیے لیکن اب میں سمجھتی ہوں کہ بس بہت ہوگیا۔

اداکارہ نے بتایا کہ ’میں نے 2018 میں ’خسارہ‘ ڈراما کیا، یہ میرا آخری ٹیلی ویژن کردار تھا اور اس میں، میں نے واقعی ایک مضبوط عورت کا کردار ادا کیا، یہی وہ پہلو ہے جس کو میں نمایاں کرنا چاہتی ہوں کہ خواتین مضبوط اور قابل تقلید ہیں‘۔

ثروت گیلانی کا تازہ ترین پروجیکٹ ’جوائے لینڈ‘ میں ایک کردار ہے، صائم صادق کی تیار کردہ یہ انڈیپینڈنٹ فلم رواں سال ’کینز 2022‘ فیسٹول میں پیش کی گئی اور 2 ایوارڈز بھی حاصل کیے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.