پاکستانفیچرڈ پوسٹ

جمہوریت کا بوریا بسترکیسےگول ہوگا؟جاوید چوہدری پھٹ پڑے

جمہوریت کا بوریا بسترکیسے گول ہوگا؟ صحافی جاوید چوہدری پھٹ پڑے،صدارتی نظام لانے کی تیاریا زور پکڑنے لگیں اہم شخصیت ملوث،

جمہوریت کا بوریا بسترکیسےگول ہوگا؟ صحافی جاوید چوہدری پھٹ پڑے،صدارتی نظام لانے کی تیاریا زورپکڑنےلگیں اہم شخصیت ملوث،جاوید چوہدری اپنےکالم میں لکھتےہیں کہ ہ لوگ سمجھتےہیں مارچ 2021میں سینیٹ کےالیکشنزکےبعد عمران خان کی پوزیشن مضبوط ہوجائےگی اوریہ بڑی آسانی سےجوائنٹ سیشن بلا کرملک کوپارلیمانی سےصدارتی نظام میں شفٹ کرسکیں گےاوریہ اگرممکن نہ ہوا (اوریہ قانونی اورآئینی لحاظ سےممکن بھی نہیں) توریفرنڈم کرا کرپورے ملک سےبھی رائےلی جا سکتی ہےاوراگراپوزیشن اورعدلیہ کی طرف سےرکاوٹ آئی توعمران خان کم ازکم ایم این ایزکا مافیا اورحلقوں کی بلیک میلنگ توڑنےکےلیےپورے ملک کےحلقےضرورتبدیل کر سکتےہیں‘ یہ پورے ملک کےووٹروں کوکل حلقوں پرتقسیم کرکےسارے حلقےبرابرکردیں گےجس کےبعد تمام حلقوں کےووٹ برابرہوجائیں گےیوں برادریوں کا زوربھی ٹوٹ جائےگا اورروایتی سیاست دانوں کی شطرنج بھی بکھرجائے گی اوراس کافائدہ پاکستان تحریک انصاف اور اس کی اتحادی جماعتوں ایم کیوایم‘ ق لیگ اورگرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کوہوگا۔

پنجاب میں پاکستان مسلم لیگ ن‘سندھ میں پاکستان پیپلزپارٹی اورکے پی کےمیں اے این پی کی سیاسی دیواریں گرجائیں گی لیکن سوال یہ ہے کیا یہ ہوسکے گا؟ اس کا جواب مولوی صاحب کےاس لطیفے میں چھپا ہےجس میں کسی نےمولوی صاحب سےپوچھا تھا‘ انسان اگرنمازپڑھ رہا ہواورشیرآجائےتو انسان کو نمازتوڑدینی چاہیےیا جاری رکھنی چاہیے‘مولوی صاحب نےسنجیدگی سےفرمایا‘ بیٹا اگرشیردیکھنےکے بعد بھی تمہارا وضو قائم رہے توتم بےشک نماز جاری رکھو‘۔

Back to top button