سوشل ایشوزفیچرڈ پوسٹ

شدید ترین عوامی تنقید، پنجاب پولیس کے اہلکار اپنی حرکتوں سے باز نا آئے، ایک اور شرمناک واقعہ پر حکومت کو شرمندگی کا سامنا، عوام محکمہ کے خلاف سراپا احتجاج

ڈیرہ رحیم میں پنجاب پولیس کے اہلکار نے شہری کو صرف اس لیے تھپڑ جڑ دیا کیونکہ اس نے مدد کیلئے ہیلپ لائن 15 پر کال کر کے پولیس کو طلب کیا

شدید ترین عوامی تنقید، پنجاب پولیس کے اہلکار اپنی حرکتوں سے باز نا آئے، ایک اور شرمناک واقعہ پر حکومت کو شرمندگی کا سامنا، عوام محکمہ کے خلاف سراپا احتجاج بن گئے۔

تفصیلا ت کے مطابق عوام اور میڈیا کی تنقید کے باوجود پنجاب پولیس اپنی حرکتوں سے باز نہ آئی، ساہیوال میں 15 پر کال کر کے مدد کیلئے بلانے والے شہری کو پولیس اہلکار نے تحفظ فراہم کرنے کی بجائے تھپڑ جڑ دیا۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ پنجاب پولیس کے ایک اہلکار کی جانب سے شہری کی تذلیل کیے جانے کا ایک اور واقعہ سامنے آیا ہے۔ ساہیوال کے علاقے ڈیرہ رحیم میں پنجاب پولیس کے اہلکار نے شہری کو صرف اس لیے تھپڑ جڑ دیا کیونکہ اس نے مدد کیلئے ہیلپ لائن 15 پر کال کر کے پولیس کو طلب کیا۔ بتایا گیا ہے کہ ایک طاقتور شخص کی جانب سے ساہیوال کے نواحی گاں 110 نو ایل کے رہائشی محمد اشرف کی زمین پر لگے درخت غیر قانونی طور پر کاٹے جا رہے تھے۔ اس طاقتور شخص نے اس زمین پر غیر قانونی قبضہ بھی کر رکھا ہے، تاہم محمد اشرف نے اس تنازعے پر عدالت سے اسٹے آرڈر حاصل کر لیا تھا۔ تاہم اس کے باوجود زیر قبضہ زمین سے غیر قانونی طور پر درختوں کی کٹائی شروع کر دی گئی۔ اس صورت میں محمد اشرف نے ہیلپ لائن 15 پر کال کر کے پولیس کو مدد کیلئے طلب کیا۔ تاہم شکایت موصول ہونے کے بعد علاقہ پولیس کے اے ایس آئی محمد عثمان نے موقع پر پہنچ کر محمد اشرف کو تحفظ فراہم کرنے کی بجائے ناصرف اسے تھپڑ رسید کیے بلکہ سرعام شہری کی تذلیل بھی کی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button