سوشل ایشوزفیچرڈ پوسٹ

لاہور میں خواتین سے زیادتی درج ہونے والے کتنے فیصد مقدمات جھوٹے نکلے؟ کتنی خواتین نے اپنا میڈیکل کروایا؟ سنسنی پھیلا دینے والا انکشاف سامنے آگیا

درج مقدمات میں سے 42 خواتین نے اپنا میڈیکل ہی نہ کرایا اور بے گناہ 61 افراد کے خلاف جھوٹے مقدمات درج کرائے گئے

لاہور میں خواتین سے زیادتی درج ہونے والے کتنے فیصد مقدمات جھوٹے نکلے؟ کتنی خواتین نے اپنا میڈیکل کروایا؟ سنسنی پھیلا دینے والا انکشاف سامنے آگیا۔

تفصیلات کے مطابق صوبائی دارلحکومت لاہور میں زیادتی کے نصف واقعات اور ان کے خلاف درج کروائے جانے والے مقدمات کے جھوٹے ہونے کا انکشاف ہوا ہے- جن خواتین کی جانب سے زیادتی کے مقدمات درج کروائے گئے، انہوں نے اپنے کیس کی پیروی ہی نہیں کی اور اپنا میڈیکل کروانے سے بھی انکار کر دیا- پولیس حکام کے مطابق رواں سال شہر کے تھانوں میں 368 مقدمات درج کیے گئے جن میں سے 113 کیسز زیر سماعت ہیں۔

پولیس نے 86 مقدمات کے چالان مکمل کرکے عدالتوں میں جمع کروائے جبکہ عدم پیروی، صلح اور تفتیش کی بنیاد پر 101 مقدمات کو خارج کر دیا گیا۔ درج مقدمات میں سے 42 خواتین نے اپنا میڈیکل ہی نہ کرایا اور بے گناہ 61 افراد کے خلاف جھوٹے مقدمات درج کرائے گئے۔ پولیس ریکارڈ کے مطابق نامعلوم 72 ملزمان کو پولیس تاحال گرفتار نہ کرسکی جبکہ 14 ملزمان کو اشتہاری قرار دیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ آج ہی کے روز ایسی خاتون بھی بے نقاب ہو گئی ہے، جس نے 10 افرادکے خلاف مختلف ناموں سے مختلف شہروں میں زیادتی کے مبینہ جھوٹے مقدمات درج کرادیے۔ نجی ٹی وی نے مبینہ طور پر جھوٹے مقدمات درج کرانے والی خاتون کا ریکارڈ حاصل کرلیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ خاتون کا نام عظمی شہزادی ہے، جس نے تحریم، خنسہ، شازیہ اور طیبہ کے ناموں سے لاہور، رحیم یار خان، لودھراں، احمد پور اور ملتان میں 10مختلف افراد کیخلاف مقدمات درج کرائے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.