انٹرنیشنلفیچرڈ پوسٹ

شادی کاو عدہ ، مبینہ طور پر پاکستانی جاسوسہ نے حساس معلومات دینے والے انجینئر کو عبرتناک انجام تک پہنچایا؟ ہوشرباء حقیقت کھل کر سب کے کے سامنے آگئی

ڈیفنس ریسرچ اینڈ ڈیویلپمنٹ لیبارٹری میں کام کرنیوالے ایک انجینئر کو ایک پاکستانی جاسوسہ کو حساس معلومات فراہم کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا

شادی کاو عدہ ، مبینہ طور پر پاکستانی جاسوسہ نے حساس معلومات دینے والے انجینئر کو عبرتناک انجام تک پہنچایا؟ ہوشرباء حقیقت کھل کر سب کے کے سامنے آگئی ۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق ڈیفنس ریسرچ اینڈ ڈیویلپمنٹ لیبارٹری کے اس انجینئر کو مبینہ طور پر پاکستانی جاسوسہ نے شادی اور محبت کا جھانسہ دے کر اپنے جال میں پھنسایا اور پھر انڈیا کے میزائل پروگرام سے متعلق معلومات افشا کرنے پر مجبور کیا۔ اس حوالے سے پولیس کی جانب سے جاری کردہ ایک پریس نوٹ میں 29 سالہ انجینئر ملیکارجن ریڈی کی گرفتاری کی تصدیق کی گئی ہے اور بتایا گیا ہے کہ وہ ڈی آر ڈی ایل کے ایک کانٹریکٹ ملازم تھے جو فروری 2020 سے ادارے میں کام کر رہے تھے۔ انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق انھوں نے اپنی فیس بک پروفائل پر اس بات کا ذکر کیا کہ وہ ڈی آر ڈی ایل میں کام کرتے ہیں جس کے بعد مارچ 2020 میں انھیں ایک خاتون کی طرف سے فرینڈ ریکوئسٹ موصول ہوئی۔

پولیس کے مطابق اس خاتون نے یہ ظاہر کیا کہ ان کا نام نتاشا را ہے، وہ برطانیہ میں رہتی ہیں اور دفاعی امور کے ایک جریدے میں کام کرتی ہیں۔ پولیس کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس خاتون نے ملیکارجن ریڈی کو یہ بتایا کہ ان کے والد انڈین فضائیہ میں تھے اور بعد میں برطانیہ منتقل ہو گئے تھے۔ پولیس کے اعلیٰ ذرائع کے حوالے سے ٹائمز آف انڈیا کی خبر میں بتایا گیا ہے کہ انجینیئر سے مبینہ جاسوسہ نے انڈیا کے جوہری صلاحیت سے بھرپور بین البراعظمی بیلسٹک میزائل اور آبدوز سے مار کرنے والے میزائلوں کے بارے میں بھی معلومات مانگی تھیں۔ پولیس حکام کے مطابق ملزم نے پوچھ گچھ کے دوران سب کچھ تسلیم کر لیا اور اب پولیس مزید تفصیلات حاصل کرنے کے لیے ملیکارجن ریڈی کے ریمانڈ میں مزید توسیع کی خواہشمند ہے۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق حکام کا کہنا ہے کہ ملزم نے شادی کے وعدے پر زمین سے زمین پر مار کرنے والے انڈین اگنی میزائل اور کے سیریز کے میزائلوں میں استعمال ہونے والی ٹیکنالوجی کے بارے میں معلومات شیئر کیں۔ یاد رہے کہ کے سیریز کے میزائل خاص طور پر انڈین نیوی کی جوہری صلاحیت سے بھرپور بیلسٹک میزائل آبدوزوں کے لیے بنائے گئے ہیں۔ انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق ملزم ریڈی کا کام ڈیفنس مینوفیکچرنگ یونٹس میں جا کر وہاں کام کی پیشرفت کا جائزہ لینا اور ڈیلیوری کی تاریخ طے کرنا تھا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.