صحت

بچوں کی بہترین نیند کے لئے آزمودہ طریقے

بھرپور نیند بہتر صحت کی ضامن ہے، عمر کوئی بھی پرسکون نیند ہر ایک کے لئے یکساں ضروری ہے۔

بچوں میں نیند کی اہمیت اور بھی بڑھ جاتی ہے کیو نکہ وہ بڑھوتری کے عمل سے گز رہے ہوتے ہیں نیند کی کمی صحت مند نشوونما میں رکاوٹ کا سبب بنتی ہیں۔ بچوں کو صحیح وقت پر سلانا ایک مشکل طلب عمل ہے کیونکہ وہ اسی وقت سونے کے لئے تیار ہوتے جب انہیں واقعی نیند آرہی ہوتی ہے۔ایک تحقیق کے مطابق اگر سونے سے قبل سوشل میڈیا کا استعمال کیا جائے تو یہ نیند میں خلل کا سبب بن سکتا ہے۔ڈیجیٹل آلات سے کنارہ کشی اختیارکرنا ایک مشکل عمل ہے، لیکن بچوں کو وقت پر سلانے کے لئے ان چند تجاویزعمل کیا جائے تو بہتر نتائج برآمد ہوسکتے ہیں۔

الیکٹرانک آلات

نیشنل ہیلتھ سروسز(برطانیہ) میں کئے جانے والے سروے کے مطابق 16 سال سے کم عمر بچوں میں نیند کے مسائل میں کئی گناہ اضافہ رپورٹ کیا گیا ہے۔

والدین اس سلسلے میں سب اہم کام یہ کرسکتے ہیں کہ بچوں کو ایسے تمام الیکٹرانک آلات بند کرنے کو کہیں جنہیں وہ سونے سے قبل ضرور استعمال کرتے ہیں ان میں موبائل سر فہرست ہے۔ ڈکٹروں کا اس ضمن میں یہ کہنا ہے سونے سے 30 منٹ پہلے ٹیکنالوجی سے پاک ماحول بنائیں تمام الات بند کر دیں تاکہ نیند کے لئے ایک ماحول بن جائے۔

نیند کا وقت

ایک قول بہت مشہور ہے کہ وقت پر کھانا وقت پر سونا بہتر صحت کے لئے بہت ضروری ہے۔

وقت پر سونے سے مراد یہ ہے کہ ایک وقت مقرر کر لیا جائے اور اس پر سختی سے عمل کیا جائے، اگر سونے کا وقت روز تبدیل ہوتا رہے گا تو یہ نیند میں خلل بیدا کرے گا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ سونے اور جاگنے سمیت تمام معاملات میں بچوں کی روٹین کو ترتیب دینا بہتر طرززندگی کے لئے نہایت ضروری ہے اس طرح نیند کے اوقات کار درست رہیں گے۔

پرسکون ماحول

سونے سے قبل کچھ ایسے کام جس میں بچے اپنے ذہن کو استعمال کریں بہتر اور پرسکون نیند میں معاون ثابت ہوتے ہیں۔

اس کے لئے بچوں کو بستر پرجانے کے بعد بتیاں بجھا دیں اور انہیں کہیں  کہ وہ اپنی چھٹیوں کو اپنی من پسند جگہ پر گزارنے کے بارے میں سو چیں اس طرح وہ اپنی خیال میں کھو جائیں گے اور جلد ہی انہیں نیند آجائے گی۔

بہتر غذا کا انتخاب

یہ بات تو سب ہی جانتے کہ میٹھی غذا کا استعمال بچوں کو متحرک کر دیتا ہے اور ان میں توانائی کو بڑھادیتا ہے لیکن میٹھی اشیاء ہی نیند کو متاثر نہیں کرتی بلکہ سائنسدان کے مطابق سونے سے پہلے پنیر کا استعمال بھی معدے پر اثر انداز ہوتا ہے اور اس طرح برے خواب ان کو گہری نیند کے دوران بیدار کر سکتے ہیں۔

ماہرین کے مطابق بچوں کو سونے سے 45 منٹ پہلے سیب یا کوئی اور پھل کھانے کو دیں اس طرح ان کا پیٹ بھرا رہے گا اور اس طرح بچے بھوکے بھی نہیں سوئیں گے۔

آرام دہ بستر

بچے اگرنیند کے دوران بے چین ہورہے ہیں یا بھرپور نیند نہیں لے رہے تو ان کے بستر کودیکھیں۔

بچے جس بستر پر سو رہیں ہیں وہ زیادہ سخت ہو، کوشش کریں بچوں کو قدرے نرم اور ہموار بسترپر سلائیں تاکہ بچوں کو بھر پور نیند کے ساتھ ان کےجسم کو بھی بہترسپورٹ مل سکے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.