انٹرنیشنل

شام کا آیاصوفیہ کومسجد میں تبدیل کرنےپراحتجاج

صدربشارالاسد نےشام میں عیسائی آبادی والےشہرالسقیلبیعہ میں آیاصوفیہ کی نقل آیاصوفیہ چرچ بنانےکا اعلان کردیا

شام کا ترکی میں آیاصوفیہ کومسجد میں تبدیل کرنےپراحتجاج،شام کےصدربشارالاسد نےشام میں عیسائی آبادی والےشہرالسقیلبیعہ میں آیاصوفیہ کی نقل آیاصوفیہ چرچ بنانےکا اعلان کردیا۔ تفصیلات کےمطابق صدربشارالاسد کی سربراہی میں شامی حکومت نےاعلان کیا ہےکہ وہ ترک حکومت کی جانب سےتاریخی عمارت کوایک میوزیم سےمسجد میں بدلنےکےخلاف احتجاج کرتےہوئےآیاصوفیہ کی نقل تیارکی جائے گی۔آیاصوفیہ چرچ کی تعمیرجووسطی صوبہ حما میں ہورہی ہے ،اس میں شام کا حلیف ملک روس اسکی مدد کرے گا۔ لبنان کےخبررساں ادارےکےمطابق اس عمارت کا خیال صوبےکےاندرحکومت کےحامی وفادارملیشیا کےرہنما نبیل ال عبد اللہ نےپیش کیا ہے۔ نیکولوس بالبکی میں یونانی آرتھوڈوکس چرچ کےمیٹروپولیٹن بشپ کی منظوری حاصل کرنےکےبعد اس منصوبےپرکام شروع کیا جائےگا۔

دوسری جانب آیا صوفیہ کودوبارہ مسجد میں تبدیل کرنےکےبعد یہ پہلا موقع ہےجب یہاں عید کی نمازادا کی گئی ہے۔اس موقع پرترکی کے مسلمانوں کی جانب بہت خوشی کا اظہارکیا گیا۔آیا صوفیہ میں نمازادا کرنےکےلیےشہریوں کی بڑی تعداد نےشرکت کی۔ مسلم ممالک کی جانب سےآیا صوفیہ میوزیم کودوبارہ مسجد میں تبدیل کرنےکےاقدام کوانتہائی خوش آئند قراردیا گیا تھا۔ترکی کےشہراستنبول کی معروف مسجد آیا صوفیہ میں 86 برس بعد نمازجمعہ ادا کی گئی۔اس موقع پرلاکھوں فرزندان توحید نمازجمعہ پڑھنےکیلئےآیا صوفیہ پہنچے،یوں لگ رہا تھا جیسےپورا استنبول ہی نمازکیلئےامڈ آیا ہو،نمازسے قبل خطبہ ہوا اورترک صدرنےتلاوت بھی کی۔ طویل عرصےبعد جب مسجد کےمیناروں سےاذان کی پرسوزصدا بلند ہوئی توکئی آنکھیں اشک بارہوگئیں اورروح پرورمناظر دیکھنےمیں آئے۔ رات سبے ہی لوگوں نےمسجد کےباہر ڈیرے ڈال لیےتھے۔ تاہم ڈیڑھ ہزارنمازیوں کی گنجائش ہونےاورمسجد میں جگہ نہ ملنےکےباعث لاکھوں شہریوں نےباہرگلیوں اورسڑکوں پر نماز پڑھی۔ نمازجمعہ میں ترک صدررجب طیب اردوان، وزرا،اعلیٰ شخصیات اورارکانپارلیمنٹ نےبھی شرکت کی۔ ترکی کی اعلیٰ عدالت کونسل آف اسٹیٹ نےاستنبول میں واقع تاریخی عمارت آیا صوفیا کومیوزیم سےمسجد میں تبدیل کرنےکا فیصلہ سنایا۔

Tags
Back to top button
Close