انٹرنیشنل

امریکی صدر ایرانی ریسلر کو بچانے میدان میں کود پڑے

ایران نے ریسلر کو حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت پر کوڑوں کی سزا کے ساتھ سزائے موت بھی سنائی ہے

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ ایرانی ریسلر کو سزائے موت سے بچانے کے لیے میدان میں آگئے۔حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت کے الزام پر ریسلر کو گرفتار کیا گیا تھا۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق ایران میں 2018 ء میں ہونے والے حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت کے الزام میں 27 سالہ ریسلر نوید افکاری کو گرفتارکیا گیا تھا۔ میڈیا کا بتانا ہے ایران نے ریسلر کو حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت پر کوڑوں کی سزا کے ساتھ سزائے موت بھی سنائی ہے۔ امریکی صدر ٹرمپ جواں سال ریسلر کو سزا سے بچانے کے لیے میدان میں آگئے ہیں۔ ٹرمپ نے ایرانی ریسلر کے حق میں ٹوئٹ کرتے ہوئے ایرانی حکومت سے نوید افکاری کو سزائے موت نہ دینے کی درخواست کی۔ ٹرمپ نے اپنی ٹوئٹ میں کہا سنا ہے کہ ایران کی حکومت ریسلنگ اسٹار نوید افکاری کو سزائے موت دینے کی تیار کررہی ہے۔

امریکی صدر کا کہنا تھا کہ مظاہرین ایران کی بدترین معاشی صورتحال اور مہنگائی کے خلاف مظاہرہ کررہے تھے۔ ٹرمپ نے کہا کہ ایرانی رہنماں سے کہتا ہوں کہ اگر وہ اس نوجوان کی زندگی بخشیں گے اور اسے سزائے موت نہیں دیں گے تو میں ان کے اس فیصلے کو بہت سراہوں گا۔ عرب میڈیا کا بتانا ہے کہ نوید افکاری کو سزائے موت سے بچانے کے لیے سوشل میڈیا پر ٹرینڈ بھی چل رہا ہے تاہم ایرانی حکام کا کہنا ہے کہ ریسلر نوید افکاری اور ان کے بھائی کو ایرانی سیکیورٹی ایجنٹ کے قتل میں مجرم ٹھہرایا گیا ہے۔

Back to top button