انٹرنیشنل

خون میں آکسیجن کی کمی،ٹرمپ کےلیےآئندہ چوبیس گھنٹےانتہائی اہم

امریکی صدرکی طبیعت سےمتعلق وائٹ ہاؤس کا کہنا ہےکہ ٹرمپ کےلیےآئندہ چوبیس گھنٹےانتہائی اہم ہوں گے

امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کی طبیعت میں مسلسل بہتری آرہی ہے، تاہم ٹرمپ کودومرتبہ خون میں آکسیجن کی کمی کا مسئلہ ہوا ہے۔ وائٹ ہاؤس کی میڈیکل ٹیم نےڈونلڈ ٹرمپ کی طبیعت سےمتعلق بریفنگ دیتےہوئےبتایا کہ آکسیجن کی کمی پرٹرمپ کوسپلیمنٹل آکسیجن تجویزکی گئی۔ میڈیکل ٹیم کا کہنا ہےکہ صدرٹرمپ کوجمعہ کی صبح سےاب تک بخارنہیں ہوا ہے،ٹرمپ کوریمڈیسیورکی دوسری خوراک مکمل کردی گئی ہے۔ وائٹ ہائوس کا کہنا ہےکہ ٹرمپ کا جگراورگردے کا نظام بالکل ٹھیک کام کررہا ہے، کورونا وائرس میں مبتلا امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کی طبیعت سےمتعلق وائٹ ہاؤس کا کہنا ہےکہ ڈونلڈ ٹرمپ کےلیےآئندہ چوبیس گھنٹےانتہائی اہم ہوں گے۔

وائٹ ہاؤس کےچیف آف اسٹاف مارک میڈوزکےمطابق صدرپچھلے24 گھنٹوں کےدوران انتہائی تشویشناک صورتحال سےگزرے تاہم یہ واضح نہیں کہ صدرکی طبیعت مکمل بحال ہونےمیں کتنا وقت لگےگا۔ دوسری جانب ڈونلڈ ٹرمپ نےاسپتال سےویڈیو بیان جاری کیا ہےجس میں ان کا کہنا ہےکہ وہ پہلےسےبہترمحسوس کررہےہیں تاہم کورونا سےریکوری کےلیےآئندہ چند روزاصل امتحان ہے۔ ویڈیوبیان میں صدرٹرمپ نے امید ظاہرکی کہ وہ جلد انتخابی مہم میں واپس آئیں گے۔ ڈاکٹروں کےمطابق ڈونلڈ ٹرمپ کوہفتہ کوبخارنہیں تھا، انہیں ریمڈیسویردوا بھی دی گئی ہے۔ امریکی میڈیا کےمطابق صدرٹرمپ کوجمعہ کواسپتال منتقل کرنےسےپہلےآکسیجن لگانا پڑی تھی۔

Back to top button