انٹرنیشنل

اسرائیل کی اقوام متحدہ پر بڑی پابندی‘ پوری دنیا میں ہلچل مچ گئی

اسرائیل ویزا کی درخواستوں سے باضابطہ طور پر انکار نہیں کر رہا لیکن جون سے ٹال مٹول کررہا ہے

اسرائیل نے اقوام متحدہ عملے پر بڑی پابندی لگا دی جس پر پوری دنیا میں ہلچل مچ گئی ہے، اسرائیل نے غیر قانونی آبادی کاری کی رپورٹ پر پابندی لگائی ہے۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے دفتر کے ترجمان روپرٹ کولویل کا کہنا ہے کہ اسرائیل ویزا کی درخواستوں سے باضابطہ طور پر انکار نہیں کر رہا لیکن ویزوں کے اجرا اور ان کی تجدید کے معاملے پر جون سے ٹال مٹول کررہا ہے۔ اقوام متحدہ کیانسانی حقوق کے دفتر کے ترجمان نے صورت حال کوتشویشناک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ادارے کے اراکین کو ویزیکی مدت ختم ہونے پر اسرائیل چھوڑنا پڑ رہا ہے اور ویزوں کا اجرا نہ ہونے کے سبب عملیکے 3 نئے اراکین کی تعیناتی بھی تعطل کا شکار ہوگئی ہے۔

خیال رہے کہ اقوام متحدہ کے ہیومن رائٹس دفتر نے رواں سال فروری میں اسرائیل کی جانب سے مغربی کنارے میں غیر قانونی آبادکاریوں میں شامل 112 کمپنیوں کی فہرست جاری کی تھی۔ رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ یہ کمپنیاں مغربی کنارے پر ہونے والی غیر قانونی آبادکاریوں کی ذمہ دار ہیں، ان میں سے 94 کمپنیاں اسرائیل اور 18 دیگر ممالک کی ہیں۔ اس رپورٹ پر اسرائیل نے ناراضی کا اظہار کرتے ہوئے دھمکی دی تھی کہ وہ اقوام متحدہ کے ہیومن رائٹس دفتر سے تعلقات ختم کردیگا۔

Back to top button