انٹرنیشنلفیچرڈ پوسٹ

ایران کا نیا ایٹمی تجربہ،امریکا اوریورپ لرزاُٹھے

ایران کاتیارکردہ طیارہ بردارجنگی بحری جہازہیلی کاپٹر،ڈرونزاورمیزائل لانچر لےجانےکی صلاحیت رکھتا ہے

ایران کا نیا ایٹمی تجربہ،امریکا اوریورپ لرزاُٹھے،  ایران محدود وسائل کے باوجود طیارہ بردار جنگی بحری بیڑہ تیار کرنے والا دنیا کا واحد اسلامی ملک بن گیا، ایران کی جانب سے تیار کردہ طیارہ بردار جنگی بحری جہاز ہیلی کاپٹر، ڈرونز اور میزائل لانچر لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ایران نے محدود وسائل کے باوجود اپنی جنگی صلاحیت میں اضافے کیلئے طیارہ بردار جنگی جہاز بنا کر امریکا سمیت بڑی بڑی عالمی قوتوں کو حیرانگی میں مبتلا کر دیا۔بتایا گیا ہے کہ ایران نے خاموشی سے اپنا طیارہ بردار جنگی بحری جہاز تیار کیا، کسی کو کان و کان خبر نہ ہوئی کہ ایران اس قدر جدید جنگی ہتھیار تیار کر رہا ہے۔

بتایا گیا ہےکہ ایران نےامریکہ سےحالیہ کشیدگی کےتناظرمیں اس نے ایک بڑا جنگی بحری جہازتیارکیا ہے۔اس بحری جنگی جہازکا نام پاسداران انقلاب کےمقتول کمانڈرعبداللہ رودکی کےنام پررکھا گیا ہے۔اس جنگی بحری جہاز پرزمین سےزمین تک مارکرنےوالےمیزائل اور اینٹی ایئر کرافٹ میزائل اور 4 چھوٹی ایسی تیزرفتار کشتیاں بھی موجود ہیں جوخلیج عرب میں پاسداران انقلاب کےاہلکارمعمول کےمطابق استعمال کرتے ہیں۔ پاسداران انقلاب کا کہنا ہے کہ اس کے جہازکی لمبائی 150 میٹرہے۔ یہ طیارہ بردارجنگی بحری جہازامریکا اوردوسرے ممالک کے طیارہ بردارجنگی بحری جہازوں کےمقابلےمیں قدرے چھوٹا ہے، تاہم ایران کی بحریہ کیلئےانتہائی موثرہے۔جہازمیں جنگی طیاروں کی اڑان اور لینڈنگ کیلئے رن وے تو موجود نہیں ہے تاہم اس میں ہیلی کاپٹر کے لیے ایک لینڈنگ پیڈ ضرورموجود ہے۔ دفاعی ماہرین کےمطابق اس طیارہ بردارجنگی بحری جہازکی وجہ سے ایران کی جنگی قوت میں اضافہ ہوا ہے۔

Back to top button