انٹرنیشنلفیچرڈ پوسٹ

امریکا کو کونسی طاقتیں چلا رہی ہیں، اختیارات کس کے ہاتھ میں ہیں؟ مغرب سے تہلکہ خیز خبر نے پوری دنیا میں ہلچل مچا کر رکھ دی

دنیا بھر کے ممالک میں ڈیپ اسٹیٹ کا فتوی دینے والا امریکہ آج خود اسی مرض کا شکار ہو چکا ہے‘اس بات کا فیصلہ امریکی عوام نے خود کیا ہے

امریکا کو کونسی طاقتیں چلا رہی ہیں اور اس کے اختیارات کس کے ہاتھ میں ہیں؟ مغرب سے آنے والی تہلکہ خیز خبر نے پوری دنیا میں ہلچل مچا کر رکھ دی۔

ایک تازہ ترین سروے کے مطابق امریکیوں نے اس بات کا اظہار کیا ہے کہ یہاں ڈیپ اسٹیٹ ایکٹو ہے اور وہ امریکہ کا نظام چلا رہی ہے۔ اس ڈیپ اسٹیٹ نے ڈونلڈ ٹرمپ کو کمزور کیااور وہ ٹرمپ کو وائٹ ہاس سے نکالنے کا ہر ممکن حربہ استعمال کررہی ہے۔اس سروے کے مطابق امریکیوں کی اکثریت نے یہ بھی کہا ہے کہ اس ملک میں جھوٹی معلومات وائرل کی جاتی ہیں اور اس کے پسِ پردہ اپنے مفادات حاصل کیے جاتے ہیں۔اس میں کوئی شک نہیں کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے الیکشن نتائج ماننے سے انکار کر کے عدالت میں جا کر یہ واضح کر دیا کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی ہے اور یہ بھی حقیقت ہے کہ امریکی عدالتوں نے ٹرمپ کے خلاف فیصلہ دیا مگر پھر بھی آدھے سے زیادہ امریکی سمجھتے ہیں کہ دال میں کچھ کالا ہے اور یہ الیکشن فیئر اینڈ فری نہیں ہوئے بلکہ ڈیپ ریاست کے کسی خفیہ ہاتھ نے ان الیکشن میں دھاندلی کا کھیل کھیلا ہے۔

سروے نتائج کے مطابق 39%امریکیوں کا ماننا ہے کہ اس ملک میں ڈیپ اسٹیٹ ایکٹو ہے اور وہ ڈونلڈ ٹرمپ کو کمزور کرنے کے مشن پر لگی ہوئی ہے۔جبکہ اکثریتی عوام نے یہ کہا کہ ڈیپ اسٹیٹ ہے یا نہیں ہمیں الیکشن رزلٹ ضرور ماننا چاہیے اور ہم چاہتے ہیں کہ طاقت کی منتقلی باحسن طریق انجام پا جائے۔ڈونلڈ ٹرمپ خاموشی سے وائٹ ہاس چھوڑ دے اور جوبائیڈن آ کر ملک کی باگ ڈور سنبھالے۔ امریکی شہریوں کا یہ بھی کہنا تھاکہ ملک میں کورونا وائرس کے حوالے سے بھی بہت زیادہ جھوٹی معلومات فراہم کی گئیں اور بدقسمتی یہ ہے کہ یہ سب حکومتی سطح پر ہوا اور ہمیں اندیشہ ہے کہ آئندہ چار سال بھی ملک میں امن و امان کی صورت حال تشویشناک رہے گی۔جبکہ عوام نے سیاہ فاموں کے ساتھ ہونے والے مظالم کے حوالے سے بھی رائے کا اظہار کیا۔کچھ کے مطابق سیاہ فاموں کو غلامانہ زندگی گزارنی چاہیے جبکہ اکثریت نے ان کے حقوق انہیں دینی کی بات کی ہے مگر امریکیوں نے ملک میں ڈیپ اسٹیٹ کے رول پر تشویش کا اظہار کیااور کہا کہ ایسا نہیں ہونا چاہیے ملک کی باگ ڈور منتخب حکومت کے ہاتھ میں ہونی چاہیے نہ کہ خفیہ ہاتھ اپنے مقاصد پورے کرنے کے لیے جھوٹی معلومات پھیلا کر لوگوں کو گمراہ کریں۔

متعلقہ خبریں