انٹرنیشنلفیچرڈ پوسٹ

ایران کا جوہری پروگرام کہاں تک پہنچ گیا؟ امریکا سمیت کن کن ممالک کو خطرات لاحق ہو چکے؟ دنیا بھر میں تشویش کی لہر دوڑ گئی

ایران نے عالمی جوہری معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ایک مرتبہ پھر یورینیئم کی 20 فیصد تک افزودگی شروع کردی ہے

ایران کا جوہری پروگرام کہاں تک پہنچ گیا؟ امریکا سمیت کن کن ممالک کو خطرات لاحق ہو چکے؟ دنیا بھر میں تشویش کی لہر دوڑ گئی‘ عالمی جوہری معاہدے میں ایران پر اس حد تک یورینیئم کی افزودگی کی اجازت نہیں تھی۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق ایران نے فردو کے علاقے میں زیر زمین جوہری مرکز میں یورینیئم کی 20 فیصد تک افزودگی دوبارہ شروع کر دی ہے جب کہ عالمی جوہری معاہدے میں ایران پر اس حد تک یورینیئم کی افزودگی کی اجازت نہیں تھی۔ عالمی جوہری معاہدے کی خلاف ورزی سے متعلق حکومتی ترجمان کا کہنا تھا کہ ایسا امریکی صدر ٹرمپ کی جانب سے جوہری معاہدے سے یک طرفہ طور پر نکل جانے اور ایران پر بلا جواز پابندیاں عائد کرنے کے بعد کیا گیا ہے۔ ایران کی وزارت خارجہ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ پہلے امریکا نے معاہدے کی خلاف ورزی کی جس کے بعد ہمارے پاس کوئی اور آپشن نہیں بچا تھا۔ امریکا کی دستبرداری کے بعد بھی ہم نے 2 سال تک انتظار کیا۔ خیال رہے کہ بین الاقوامی ایٹمی توانائی ایجنسی نے یکم جنوری کے روز بتایا تھا کہ ایرانی حکام نے فردو کے جوہری مرکز میں یورینیئم کی بیس فیصد تک افزودگی کا عمل بحال کرنے سے متعلق آگاہ کیا ہے۔

متعلقہ خبریں