انٹرنیشنل

کورونا نے چین میں ایک بار پھرقیامت ڈھادی

چین میں کورونا وبا کی صورت حال گزشتہ برس مارچ کے بعد سے سب سے زیادہ حد تک خراب ہوچکی ہے

چین وہ ملک ہے جہاں کورونا کا پہلا کیس رپورٹ ہوا تھا اورپھر یہ مہلک وائرس دنیا کے طول و ارض میں پھیل گیا۔ دنیا بھرمیں فضائی آپریشن بند، معاشی سرگرمیاں ٹھپ اور اسپتال مریضوں سےبھرگئےتھے۔ چین نے اپنے بہترین نظام صحت اورسخت احتیاطی تدابیرکو اپناتے ہوئے سب سے پہلے اس وبا پر قابو بھی پالیا تھا تاہم اب دوبارہ سےچین میں بھی یہ وبا سراُٹھانے لگی ہے۔ مارچ 2020 کے بعد سے سب سے تشویشناک صورت حال کا سامنا ہے۔

قومی صحت اتھارٹی کی جانب سےجاری بیان میں کہا گیا ہےکہ چین میں گزشتہ ہفتےروزانہ کی بنیاد پراوسطاً سوسےزائد کیسزسامنےآئے ہیں جب کہ پیرکو 118 نئےمریض سامنےآئےہیں۔ نیشنل ہیلتھ کمیشن کےمطابق نئےکیسزمیں سے 106 مقامی تھےجن میں سے 35 دارالحکومت بینجگ میں تھےجب کہ 43 آس پاس کےعلاقوں میں رپورٹ ہوئےہیں۔ واضح رہےکہ چین میں نئےسال کی تعطیلات سے قبل بڑے پیمانے پرکورونا ٹیسٹنگ کی جارہی ہیں اوراس سےقبل سخت احتیاطی تدابیرنافذ کی گئی ہیں۔

 

متعلقہ خبریں

Back to top button