انٹرنیشنل

ایران نےجوہری پروگرام پرامریکا کےسامنےگھٹنےٹیک دئیے

وزیرخارجہ جوادظریف کا کہنا ہےکہ امریکا پابندیاں اٹھائےہم جوہری پروگرام سےمتعلق اقدامات واپس لینےکےلیےتیارہیں

ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف کا کہنا ہےکہ امریکا پابندیاں اٹھائےہم جوہری پروگرام سےمتعلق اقدامات واپس لینےکےلیےتیارہیں۔ امریکا کی جانب سےایران سےجوہری معاہدہ میں شمولیت کےاشارہ کےبعد ایران نےبھی معاہدہ کی شرائط پرمکمل عمل درآمد کا عندیہ دیا ہے۔ ٹوئٹرپر ایران کےوزیرخارجہ جواد ظریف کا کہنا ہےکہ اگرامریکا تمام پابندیاں اٹھا دے توایران فوری طورپرجوہری پروگرام سےمتعلق تمام اقدامات واپس لےلیگا۔

غیرملکی خبررساں ادارے سےبات کرتےہوئےایران کےسینیئرحکام نےمسئلہ کےحل کےلیےسفارت کاری پرزوردیتےہوئےکہا کہ تہران امریکا کی جانب سےجوہری معاہدے کی بحالی سےمتعلق ڈیل پرغورکررہاہےلیکن امریکا سب سےپہلےخود معاہدے میں واپس آنےکا اعلان کرے۔ گزشتہ روزواشنگٹن کی جانب سےبیان میں کہا گیا تھا کہ امریکا ایران کوجوہری ہتھیاروں کےحصول سےروکنےکےلیے 2015 کے جوہری معاہدے کی بحالی کےلیے تیارہے۔

واضح رہے کہ ایران کو جوہری ہتھیار سے باز رکھنے کے لیے عالمی قوتوں امریکا، برطانیہ، روس، چین، فرانس اور جرمنی نے 2015 میں ایک معاہدہ کیا تھا جس سے 2018 میں صدر ٹرمپ نے یک طرفہ طور پر دستبردار ہو کر ایران پر اقتصادی پابندیاں عائد کردی تھیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button