انٹرنیشنل

امریکا کا شام میں ایرانی حمایت یافتہ ملٹری انفراسٹرکچر پر حملہ، 17 ہلاک

صدر جو بائیڈن کی ہدایت پر ایرانی حمایت یافتہ ملیشیا پر حملہ کیا گیا جو عراق میں امریکی فوجیوں پر کیے گئے حالیہ راکٹ حملے کا ردعمل ہے

امریکا کی جانب سے شام میں ایران کے حمایت یافتہ ملٹری انفرا اسٹرکچر پر حملے میں 17 عسکریت پسند ہلاک ہو گئے جس کی تصدیق پینٹا گون نے کر دی ہے۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق امریکی فوج کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ مشرقی شام میں ایران کی حمایت یافتہ ملیشیا پر حملہ کیا گیا۔ امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون کے ترجمان جان کربی کا کہنا ہے کہ صدر جو بائیڈن کی ہدایت پر ایرانی حمایت یافتہ ملیشیا پر حملہ کیا گیا جو عراق میں امریکی فوجیوں پر کیے گئے حالیہ راکٹ حملے کا ردعمل ہے۔

پینٹاگون حکام کے مطابق امریکی طیاروں نے ایرانی حمایت یافتہ ملٹری انفرااسٹرکچر پر 500 پونڈ کے 7 جوائنٹ ڈائریکٹ اٹیک میونیشن گائیڈڈ پریسیشن بم گرائے اور مسلح گروپ کی جانب سے اسلحے کی منتقلی سمیت 7 مختلف اہداف کو نشانہ بنایا گیا۔ سیرین آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس کے مطابق امریکی حملوں میں ایک درجن سے زائد ایرانی حمایت یافتہ جنگجو ہلاک ہوئے اور اسلحہ و بارود لیکر جانے والی تین گاڑیاں بھی تباہ ہوئیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button