انٹرنیشنل

مودی بنگلہ دیش کے دورے پر کیوں گئے ہیں؟ اور وہ ایک تیر سے کونسے دو شکار کرنے والے ہیں؟ ہنگامہ خیز رپورٹ سامنے آنے کے بعد ہلچل مچ گئی

مودی بنگلہ دیش کی آزادی کی گولڈن جوبلی تقریبات اور 'بنگ بندھو شیخ مجیب الرحمان کی صد سالہ سالگرہ کی تقریبات میں شرکت کیلئے پہنچے

مودی بنگلہ دیش کے دورے پر کیوں گئے ہیں؟ اور وہ ایک تیر سے کونسے دو شکار کرنے والے ہیں؟ ہنگامہ خیز رپورٹ سامنے آنے کے بعد ہلچل مچ گئی ہے۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق کورونا وبا شروع ہونے کے بعد سے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی جب اپنے پہلے غیر ملکی دورے پر جمعہ 26مارچ کو ڈھاکہ پہنچنے تو بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ نے ان کا خیر مقدم کیا۔ مودی دو روزہ دورے کے دوران بنگلہ دیش کی آزادی کی گولڈن جوبلی تقریبات اور ‘بنگ بندھو شیخ مجیب الرحمان کی صد سالہ سالگرہ کی تقریبات میں شرکت کے علاوہ اورکانڈی ٹھاکر باڑی کا بھی دورہ کریں گے۔ جو متوا بنگالیوں کے روحانی پیشوا گرو ہری چند ٹھاکر کی جائے پیدائش ہے۔ متوا بنگالی مغربی بنگال کے الیکشن میں اہم عنصر ہیں۔ وزیر اعظم مودی نے ڈھاکہ روانگی سے قبل ایک ٹوئٹ کر کے کہا،میں بالخصوص اورکانڈی میں متوا کمیونٹی کے نمائندوں سے ملاقات کرنے کا متمنی ہوں، جہاں سے شری شری ہری چندر ٹھاکر جی نے اپنا مقدس پیغام دیا تھا۔” انہوں نے ڈھاکہ سے شائع ہونے والے اخبار ڈیلی اسٹار میں شائع اپنے مضمون کا لنک بھی شیئر کیا ہے۔ مودی نے کہا کہ وہ شیخ حسینہ کے والد بنگ بندھو کے نام سے مشہور بنگلہ دیش کے پہلے وزیر اعظم شیخ مجیب الرحمان کی قبر پر خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے ٹنگی پاڑہ بھی جائیں گے۔

تجزیہ کاروں کا خیال ہے کہ نریندر مودی ‘اپنے اسٹائل کے مطابق اس غیر ملکی دورے کے دوران بھی ایک تیر سے دو شکار کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ سینئر بھارتی صحافی گوتم ہورے نے اس حوالے سے ڈی ڈبلیو اردو سے بات چیت کرتے ہوئے کہا،مودی یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ وہ بنگلہ دیش کو سب سے زیادہ اہمیت دیتے ہیں یہی وجہ ہے کہ کورونا وبا شروع ہونے کے بعد سے وہ اپنا پہلا دورہ بنگلہ دیش کا کر رہے ہیں۔ دوسری طرف وہ مغربی بنگال کے متوا بنگالیوں کا دل جیتنے کی کوشش کر رہے ہیں۔کیونکہ شہریت کے معاملے پر متوا بی جے پی سے ناراض ہیں۔دراصل مودی حکومت نے ان کی شہریت کے مسئلے کو فورا حل کرنے کا وعدہ کیا تھا لیکن اسے پورا نہیں کیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button