انٹرنیشنل

افغانستان :طالبان حملےمیں پولیس چیف سمیت 10 اہلکارہلاک

صوبےہلمند کےعلاقے سنگین کی مرکزی شاہراہ پرطالبان جنگجوؤں نےپولیس قافلےپردھاوا بول دیا

افغان میڈیا کےمطابق صوبےہلمند کےعلاقے سنگین کی مرکزی شاہراہ پرطالبان جنگجوؤں نےپولیس قافلےپردھاوا بول دیا،حملہ اتنا اچانک تھا کہ پولیس کوسنبھلنے کا موقع نہیں مل سکا۔ پولیس قافلےپرحملےمیں ٹاؤن پولیس چیف محمد سروری سمیت 10 اہلکارہلاک اورمتعدد زخمی ہوگئے۔ طالبان نےحملےکی ذمہ داری قبول کرلی ہے۔ پولیس نےدعویٰ کیا ہےکہ جوابی کارروائی میں 15 طالبان بھی مارے گئےتاہم آزاد ذرائع سےاس کی تصدیق نہیں ہوسکی ہےاورنہ ہی پولیس نےہلاک ہونےوالےجنگجوؤں کی تفصیلات فراہم کی ہیں۔

دریں اثناء قندھارصوبےمیں سڑک کنارے نصب بم دھماکےمیں تین پولیس اہلکارہلاک ہوگئےجب کہ صوبےکپیسا میں مبینہ طورپرطالبان نے افغان فوجی اہلکارکےوالد کوقتل کرکےبھائی کواغوا کرکےلےگئے۔ ایک روزقبل بھی ہلمند میں کاربم دھماکےمیں افغان فوج کے 3 اہلکار ہلاک اور 5 زخمی ہوگئےتھےجب کہ جمعرات کےروزطالبان اورسیکیورٹی فورسزکی جھڑپ میں ایک لڑکی ہلاک ہوگئی تھی۔

واضح رہےکہ افغان طالبان اورکابل حکومت کےدوحہ میں سست روی کےشکارمذاکرات اورامریکا کی نئی حکومت کی جانب سےغیرملکی فوجیوں کےانخلا میں توسیع کےعندیےکےباعث افغانستان میں دونوں جانب سےپُرتشدد کارروائیوں میں اضافہ ہوا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button