انٹرنیشنل

سعودی عرب :فوجیوں کوسزائےموت ،مگرکیوں؟

سنگین غداری اور دشمن سے دوستی کے جرم میں 3 فوجی اہلکاروں کی سزائے موت پر عمل درآمد کردیا گیا

عالمی خبر رساں ادارے کےمطابق سعودی عرب کی وزارت دفاع کی جانب سےبیان میں کہا گیا ہےکہ ہفتےکےروز 3 فوجیوں کی موت کی سزا کی تعمیل کردی گئی۔ تینوں فوجی اہلکاروں کوخصوصی عدالت نےمنصفانہ مقدمےکی سماعت کےبعد سزائےموت سنائی تھی۔ سزائے موت کےفیصلےمیں واضح نہیں کہ ان اہلکاروں کوکس دشمن ملک سےتعاون پرسزا دی گئی تاہم فوجی اہلکاروں محمد بن احمد بن یحیی عکام، شاہربن عیسی بن قاسم حقوی اورحمود بن ابراہیم بن علی حازمی کویمن کی سرحد سےملحقہ جنوبی صوبےمیں سزائےموت دیدی گئی۔

سعودی عرب میں سزائےموت پردرآمد عوامی مقام پرسرقلم کرکےیا ملزم کےسرپربراہ راست گولی مارکرکیا جاتا ہے۔ فوجی اہلکاروں کو سزائےموت کس طرح دی گئی اس حوالےسےکچھ نہیں بتایا گیا۔ واضح رہےکہ سعودی عرب نے 2020 میں 27 افراد کا سرقلم کیا گیا دی جو کئی برسوں کےمقابلےمیں نہایت کم ہے،گزشتہ سال 185 افراد کوسزائےموت دی گئی تھی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads. because we hate them too.