انٹرنیشنل

فوجی بغاوت کےخلاف بغاوت،درجنوں افراد کوسزائےموت

فوجی کیپٹن کےایک ساتھی کو قتل کرنےکےالزام میں 19 افراد کوسزائےموت سنائی گئی ہے

فوجی بغاوت کےخلاف بغاوت،درجنوں افراد کوسزائےموت،میانمارمیں اُن 19 افراد کو سزائےموت سنائی گئی ہےجوملک میں فوجی بغاوت کےخلاف مظاہروں کےدوران گرفتارکیئےگئےتھے۔ عالمی خبررساں ادارے کےمطابق میانمارمیں  فوج کےزیرانتظام ٹیلی وژن سےاعلان کیا گیا ہےکہ مظاہرے کےدوران فوجی کیپٹن کےایک ساتھی کو قتل کرنےکےالزام میں 19 افراد کوسزائےموت سنائی گئی ہے۔ فوجی ٹیلی وژن کی رپورٹ میں بتایا گیا ہےکہ یہ قتل 27 مارچ کوینگون کے شمالی ضلعےاوکالاپا میں ہوا اوریہ سزا مارشل لا قوانین کےتحت سنائی گئی ہیں۔ یکم فروری کوہونےوالی فوجی بغاوت کےبعد پہلی باراس طرح کی سزا کا اعلان کیا گیا ہے۔

ادھرملکی اقتدارپرقابض ملٹری قیادت کےترجمان بریگیڈیئرجنرل زاؤمِن تُن نےدوبرسوں میں الیکشن کرانےکا وعدہ دہراتےہوئےکہا کہ ملک میں حالات تیزی سےنارمل ہوتےجارہےہیں اورجلد ہی تمام وزارتیں اوربینکس معمول کےمطابق کام کرنا شروع کردیں گے۔ دوسری جانب قانون نافذ کرنےوالےاداروں نےینگون کےنواحی قصبےباگومیں فوجی بغاوت مخالف مظاہرین پرفائرنگ کی اوردستی بم پھینکےجس سے  10 افراد ہلاک اوردرجنوں زخمی ہوگئے۔ دریں اثنا میانمارکےایک پولیس اسٹیشن پرعسکریت پسند باغیوں کی ایک گروپ نےحملہ کرکے 10 اہلکاروں کوموت کےگھاٹ اتاردیا۔ حملہ آورپولیس کی گاڑی اوراسلحہ بھی ساتھ لےگئے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads. because we hate them too.