انٹرنیشنل

کورونا وائرس کو شکست دینے کے باوجود لوگوں میں موت کا خطرہ کس حد تک بڑھ گیا؟ نئی تحقیق سامنے آنے کے بعد دنیا بھر میں خوف کی نئی لہر دوڑ گئی‘ سب حیران

کووڈ 19 کو شکست دینے والے بشمول ایسے مریض، جن میں بیماری کی شدت معمولی تھی، میں وائرس کی تشخیص کے 6 ماہ بعد موت کا خطرہ ہوتا ہے

کورونا وائرس کو شکست دینے کے باوجود لوگوں میں موت کا خطرہ کس حد تک بڑھ گیا؟ نئی تحقیق سامنے آنے کے بعد دنیا بھر میں خوف کی نئی لہر دوڑ گئی‘ سب حیران رہ گئے۔

رپورٹ کے مطابق واشنگٹن یونیورسٹی اسکول آف میڈیسین کی اس تحقیق میں ثابت کیا گیا کہ کووڈ 19 کو شکست دینے والے بشمول ایسے مریض، جن میں بیماری کی شدت معمولی تھی، میں وائرس کی تشخیص کے 6 ماہ بعد موت کا خطرہ ہوتا ہے۔ طبی جریدے جرنل نیچر میں 22 اپریل کو شائع ہونے والی تحقیق میں شامل محققین کا کہنا تھا کہ تین کروڑ سے زیادہ امریکی شہری اس وائرس سے متاثر ہوچکے ہیں اور لانگ کووڈ کا بوجھ یقینی ہے، درحقیقت بیماری کے اثرات کئی برسوں بلکہ دہائیوں تک موجود رہ سکتے ہیں۔ تحقیق میں ثابت ہوا کہ کووڈ 19 کو شکست دینے کے بعد (بیماری کے اولین 30 دن کے بعد) مریضوں میں اگلے چھ ماہ میں موت کا خطرہ عام آبادی کے مقابلے میں لگ بھگ 60 فیصد تک بڑھ جاتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ تحقیق سے ثابت ہوتا ہے کہ کووڈ 19 کی تشخیص کے 6 ماہ بعد موت کا خطرہ موجود ہے، چاہے مریض میں بیماری کی شدت معمولی ہی کیوں نہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ کووڈ 19 کے صحت پر مرتب ہونے والے طویل المعیاد اثرات یا لانگ کووڈ آنے والے مہینوں یا برسوں میں امریکہ میں صحت کے بڑے بحران کا باعث ہوگا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads. because we hate them too.