انٹرنیشنل

میانمار میں فوج کا اقتدار پر قبضہ، باغیوں نے بھی افواج کے خلاف بڑا قدم اٹھا لیا‘ باغی عوام کو کون سی کامیابی مل گئی؟ رپورٹ سامنے آنے کے بعد سنسنی پھیل گئی

کیرن اقلیتی گروپ سے تعلق رکھنے والے باغیوں نے میانمار میں ایک فوجی چوکی پر حملہ کرکے اس پر قبضہ کرلیا ہے‘ متعدد ہلاکتیں بھی ہوئیں

میانمار میں فوج کا اقتدار پر قبضہ، باغیوں نے بھی افواج کے خلاف بڑا قدم اٹھا لیا‘ باغی عوام کو کون سی کامیابی مل گئی؟ رپورٹ سامنے آنے کے بعد سنسنی پھیل گئی ہے۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق کیرن اقلیتی گروپ سے تعلق رکھنے والے باغیوں نے میانمار میں ایک فوجی چوکی پر حملہ کرکے اس پر قبضہ کرلیا ہے۔ خبرو ں کے مطابق اس لڑائی میں متعدد ہلاکتیں ہوئی ہیں۔ کیرن نیشنل یونین (کے این یو)کے فورسز نے منگل کے روزشمال مغربی تھائی لینڈ کی سرحد کے قریب مشرقی میانمار میں ایک فوجی چوکی پر حملہ کرکے اس پر قبضہ کر لیا۔

کے این یو کے امور خارجہ کے سربراہ پادو ساہ تاو نی نے خبر رساں ایجنسیوں کو بتا یا ہماری فوج نے برمی فوجی کیمپ پر قبضہ کر لیا ہے۔” یہ لڑائی سالوین ندی کے قریب ہوئی جو میانمار اور تھائی لینڈ کو الگ کرتی ہے۔ تھائی گاوں والوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے تصادم کی جگہ سے گولیاں چلنے کی آوازیں سنیں۔ تاونی نے کہا کہ ان کا گروپ کیرن فورسز اور میانمار فوج کے درمیان ہونے والی لڑائی میں ہلاک اور زخمی ہونے والوں کی تعداد کے متعلق اطلاعات جمع کر رہی ہے۔ کیرن نیشنل لبریشن آرمی، کارین نیشنل یونین کا مسلح ونگ ہے، جو سن 1949سے ہی میانمار حکومت کے ساتھ جنگ لڑ رہی ہے۔ میانمار کے کیرن نسلی اقلیتی گروپ کے قوم پرست اپنی ایک علیحدہ آزاد ریاست چاہتے ہیں۔ میانمار کی فوج نے ملک کے جنوب مغربی کاین ریاست میں مارچ سے فضائی حملے شروع کررکھے ہیں۔ ان فضائی حملوں سے بچنے کے لیے نسلی کیرن لوگوں کو تھائی لینڈ بھاگنے کے لیے مجبور ہونا پڑا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads. because we hate them too.