انٹرنیشنل

میں اس وقت 20 سال کی تھی جب مجھے یوگا کی اہمیت کا انداز ہوا لیکن پھر ایک دن …………؟ خاتون نے اپنی آپ بیتی سنا دی

میں نے اب تک 14 ایسی خواتین کے انٹرویوز کیے ہیں جنھیں سینیئر سیواناندا ٹیچرز کے ہاتھوں مبینہ جنسی تشدد کا سامنا کرنا پڑا

میں اس وقت 20 سال کی تھی جب مجھے یوگا کی اہمیت کا انداز ہوا لیکن پھر ایک دن …………؟ خاتون نے اپنی آپ بیتی سنا کر سب کو حیران کر دیا۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق جولی سالٹر نامی خاتون کا کہنا تھا کہ میری عمر اس وقت 20 کے پیٹے میں تھی جب مجھے یوگا کے بارے میں معلوم ہوا اور پھر یہ میری زندگی کا ایک بہت اہم حصہ بن گیا۔ مجھ سے یوگا سیکھنے والوں کی طرح یہ میرے لیے صرف ایک ورزش کی کلاس نہیں تھی بلکہ زندگی گزارنے کا ذریعہ بھی تھا۔ میں صرف اپنے مقامی سیواناندا مرکز میں یوگا سکھانے ہی نہیں جاتی تھی بلکہ وہاں کھانا بھی بناتی تھی اور صفائی بھی کیا کرتی تھی۔ سیواناندا کی تربیت نے میرے وجود کے تمام پہلوؤں کو متاثر کیا تھا لیکن دسمبر 2019 میں مجھے فون پر ایک نوٹیفیکیشن موصول ہوا۔ یہ میرے سیواناندا فیس بک گروپ پر ایک پوسٹ تھی جو اس موومنٹ کے محترم بانی سوامی وشنودیواناندا کے بارے میں تھی۔

جولی سالٹر نامی خاتون نے دعوی کیا تھا کہ وشنودیواناندا نے انھیں تین برس تک کینیڈا میں سیواناندا ہیڈکوارٹر میں جنسی تشدد کا نشانہ بنایا۔ انھوں نے لکھا کہ جب انھیں دہائیوں بعد اس بارے میں بات کرنے کی جرات ہوئی تو انھوں نے سیواناندا کی انتظامیہ کے بورڈ کو اس بارے میں رپورٹ کیا تاہم ان کا ردِ عمل خاموشی سے خاموش کروانے کی کوشش تک ہی محدود تھا۔ میں نے اب تک 14 ایسی خواتین کے انٹرویوز کیے ہیں جنھیں سینیئر سیواناندا ٹیچرز کے ہاتھوں مبینہ جنسی تشدد کا سامنا کرنا پڑا اور ان میں سے اکثر نے پبلک میں اس بارے میں بات کرنا تو درکنار فیملی اور دوستوں سے بھی اس بارے میں بات نہیں کی۔ میں نے ایک سابق سٹاف کی رکن سے بھی بات کی جنھوں نے دعوی کیا کہ ان کے خدشات پر بورڈ کی جانب سے کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔

میری تحقیقات نے اس ادارے میں طاقت اور اثر و رسوخ کے غلط استعمال کے دعوں کو بے نقاب کیا ہے جو میرے دل کے انتہائی قریب تھا۔ مجھے انڈیا کے جنوب میں کیرالا شہر میں ایک سیواناندا آشرم میں اپنا پہلا دن اچھی طرح سے یاد ہے جہاں میں نے سنہ 2014 میں یوگا سکھانے کے لیے ٹریننگ حاصل کی تھی۔ وہاں دیوار پر سوامی وشنودیواناندا کی ایک خوبصورت تصویر لٹکی ہوئی تھی جو سیواناندا کے بانی تھے اور اب اس دنیا میں نہیں تھے۔ جولی کی جانب سے انھی پر الزامات لگائے جانے تھے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.