انٹرنیشنل

پنجشیر میں طالبان اور مزاحمتی فورس کے درمیان جھڑپیں، طالبان نے بڑا دعویٰ کر دیا

مزاحمتی فورس کی پنجشیر کے شاتل ضلع میں قائم 6 چیک پوسٹوں پر قبضہ کرلیا ہے اور ساتھ ہی آگے کی جانب پیشقدمی جاری ہے

افغانستان کے صوبے پنجشیر میں طالبان اور قومی مزاحمتی فورس کے درمیان مذاکرات کی ناکامی کے بعد جھڑپیں جاری ہیں جبکہ آج طالبان نے بڑا دعویٰ کر دیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق وادی پنجشیر کی دروازے پر جنگ جاری ہے۔ رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ صوبہ پنجشیر اور کپیسا کی سرحد پر گزشتہ رات سے اب تک جھڑپیں جاری ہیں اور دونوں جانب سے ایک دوسرے پر بھاری ہتھیار استعمال کیے جارہے ہیں۔ تاہم اس مقام پر ہونے والی جانی نقصان کی اطلاعات سامنے نہیں آسکی ہیں۔

دوسری جانب طالبان نے بھی قومی مزاحمتی فورس کی دفاعی لائن توڑنے کا دعوی کیا ہے۔ رپورٹس کے مطابق طالبان نے دعوی کیا ہے کہ مزاحمتی فورس کی پنجشیر کے شاتل ضلع میں قائم 6 چیک پوسٹوں پر قبضہ کرلیا ہے اور ساتھ ہی آگے کی جانب پیشقدمی جاری ہے۔ طالبان کی جانب سے مزاحمتی فورس کے جانی نقصان کا بھی دعوی کیا گیا ہے۔ ادھر مزاحمتی فورس کی جانب سے بھی طالبان کو بھاری جانی نقصان پہنچانے کا دعوی کیا گیا ہے تاہم اب تک آزاد ذرائع سے اس کی تصدیق نہیں ہوسکی ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.