انٹرنیشنل

مٹی سے بنے دنیا کے سب سے بڑے شہر کیلئے 18 کروڑ اینٹوں کی تیاری کا منصوبہ شروع

دارالحکومت ریاض کے شمال میں ایک فیکٹری تعمیر کی جائے گی جہاں کچی مٹی سے 18 کروڑ اینٹیں تیار کی جائیں گی

سعودی عرب کے شہر ریاض کے قصبے الدرعیہ میں مٹی سے بنے دنیا کے سب سے بڑے شہر کیلئے 18 کروڑ اینٹوں کی تیاری کا منصوبہ شروع ہونے جارہا ہے۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق سعودی عرب میں الدرعیہ کمپنی فار ڈیولپمنٹ کے سربراہ جوناتھن ٹیمز کا کہنا ہے کہ دارالحکومت ریاض کے شمال میں ایک فیکٹری تعمیر کی جائے گی جہاں کچی مٹی سے 18 کروڑ اینٹیں تیار کی جائیں گی۔ میڈیا کے مطابق یہ 18کروڑ اینٹیں مٹی سے بنے دنیا کے سب سے بڑیشہر کی تعمیر کیلئے استعمال کی جائیں گی۔

جوناتھن ٹیمز کا کہنا ہے کہ ‘الدرعیہ گیٹ وے’ کی تعمیر کا کام جاری ہے جو ہاتھوں سے تیار کردہ مٹی کی اینٹوں سے بنایا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ گیٹ وے اسی طرح بنایا جا رہا ہے جیسا کہ مملکت میں 300 برس قبل بنایا گیا تھا جبکہ یہ گیٹ وے دنیا میں مٹی کے سب سے بڑے شہر کا مرکزی دروازہ ہو گا۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے جوناتھن ٹیمز نے مزید بتایا کہ الدرعیہ میں کل 38 ہوٹل بنائے جائیں گے جن میں سے 25 ہوٹل گیٹ وے کے منصوبے میں شامل ہیں،ان کی تعمیر کا کام 2024 تک مکمل کرلیا جائے گا۔ اس کے علاوہ الدرعیہ میں 6 مرکزی عجائب گھر بھی بنائے جائیں گے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.