انٹرنیشنل

امریکا میں مہنگائی کا 30 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا

امریکی کنزیومرپرائس انڈیکس (سی پی آئی) اکتوبرمیں ختم ہونےوالے 12 مہینوں میں 6 اعشاریہ 2 فیصد بڑھ گیا

امریکا میں مہنگائی کا 30 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا، امریکا میں مہنگائی کا 30 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا ،اشیائےخورونوش کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ ہوگیا،بائیڈن نےکہا ہےکہ مہنگائی میں اضافہ عارضی ثابت ہوگا۔ محکمہ محنت کےاعداد وشمارکےمطابق امریکی کنزیومرپرائس انڈیکس (سی پی آئی) اکتوبرمیں ختم ہونےوالے 12 مہینوں میں 6 اعشاریہ 2 فیصد بڑھ گیا،یہ تیل، گاڑیوں اورمکانات کی قیمتوں میں اضافے کی 30 سال کی بلند ترین سطح ہے۔ امریکی لیبرڈیپارٹمنٹ کےجاری کردہ اعداد و شمارپرماہرین بھی حیران ہیں ،صدربائیڈن نےمہنگائی کے خلاف جنگ کواول ترجیح قراردیتےہوئےکہا ہےکہ مہنگائی میں اضافہ عارضی ثابت ہوگا۔

ماہرین کا کہنا ہےکہ کورونا وباء کےدوران بھی مہنگائی نےسرنہیں اٹھایا تاہم ویکسین اورلاک ڈاؤن سمیت دیگربندشوں کےختم ہونےاور معمولات کی بحالی کےساتھ ہی قیمتوں میں اضافہ دیکھا جا رہا ہے،کارکنوں کی کمی کےباعث دنیا بھرمیں سپلائی چینزمتاثرہونےسےقیمتوں پرفرق پڑا ہے ۔ مہنگائی کے 30 سالہ ریکارڈ کی خبروں پرامریکی منڈیوں میں مندی کا رجحان ہے، ڈاؤجونز 0اعشاریہ 7، ایس اینڈ پی میں 0اعشاریہ 8 اورنیسڈیک میں 1اعشاریہ 7 فی صد گرگئیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.