انٹرنیشنلفیچرڈ پوسٹ

جب میں لفٹ میں سوار ہوئی اور دروازہ بند ہوا تو ساتھ کھڑے ایک شخص نے میرے چہرے پر؟ اقوام متحدہ کی شرمناک کہانی کھلنے کے بعد نئی ہلچل مچ گئی

ادارے میں وسل بلورز (غلط کاموں کی نشاندہی کرنے والوں)کے ساتھ ہونے والے سلوک کی کسی بیرونی پینل کو تحقیقات کرنی چاہئیں

جب میں لفٹ میں سوار ہوئی اور دروازہ بند ہوا تو ساتھ کھڑے ایک شخص نے میرے چہرے پر؟ اقوام متحدہ کی شرمناک کہانی کھلنے کے بعد نئی ہلچل مچ گئی۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق اقوامِ متحدہ کی جنسی ہراسگی کے موضوع پر بات کرنے والی سابق ترجمان نے کہا ہے کہ ادارے میں وسل بلورز (غلط کاموں کی نشاندہی کرنے والوں)کے ساتھ ہونے والے سلوک کی کسی بیرونی پینل کو تحقیقات کرنی چاہئیں۔ پورنا سین کا بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب بی بی سی کی ایک تحقیقاتی رپورٹ میں اقوامِ متحدہ میں بدعنوانی اور غلط کاموں کی نشاندہی کرنے والے افراد کو نوکریوں سے نکالنے کا انکشاف کیا گیا ہے۔ پورنا سین کا کہنا ہے کہ اقوامِ متحدہ کو چاہیے کہ وہ آگے بڑھے اور پینل کی طرف سے کی گئی کسی بھی طرح کی تجاویز کو اپنائے۔

اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ وہ حقیقی وِسل بلورز کو تحفظ دینے اور قصور وار عملے کو سزا دینے کے لیے پرعزم ہے۔ بی بی سی کی دستاویزی فلم دی وسل بلورزانسائیڈ دی یو این عملے کے ارکان کے بیانات پیش کرتی ہے جنھوں نے الزامات کی اطلاع دینے کی کوشش کی تھی، جن میں فراڈ اور جنسی استحصال بھی شامل تھا۔ سبھی افراد نے کہا کہ انھیں بولنے کی سزا جھیلنا پڑی تھی اور کچھ کو برطرف کر دیا گیا تھا۔ پورنا سین کو 2018 میں ہراسگی، حملوں اور امتیازی سلوک پر بات کرنے کے لیے ترجمان مقرر کیا گیا تھا۔ انھوں نے کہا کہ اقوام متحدہ میں ایسی خواتین بھی تھیں جنھیں تعلق بنانے کا کہا گیا، ان پر الزام لگایا گیا اور ان کی عصمت دری کی گئی۔ انھوں نے کہا کہ جتنا زیادہ مردوں کو اس سے بچ جانے کی اجازت دی گئی، اتنا ہی زیادہ وہ یہ کرتے رہے۔ انھوں نے بتایا ہے کہ وہ انتہائی پریشان کن شہادتوں پر حیران نہیں ہیں۔

انھوں نے کہا کہ اس سے پتا چلتا ہے کہ بعض اوقات ہر تنظیم کے اندر سینیئر لوگوں کا تحفظ اس بات سے زیادہ اہمیت رکھتا ہے کہ کمزوروں کو نقصان نہ پہنچے۔ اس کا مطلب ہے کہ ایک ایسی تنظیم کے اندر ایک حقیقی تنا ہے جو نہ صرف انسانی حقوق کی حمایت کرتی ہے اور اس کی وکالت کرتی ہے، بلکہ درحقیقت ان میں سے زیادہ تر انسانی حقوق (کے قوانین)کی جائے پیدائش ہے۔ پھر بھی اس نے انھیں ان لوگوں تک پہنچانا نہیں سیکھا جو اس کے لیے کام کرتے ہیں۔ پورنا سین کہتی ہیں کہ ان کی خواہش ہے کہ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتیرس ایک متنوع بیرونی پینل کا تقرر کریں تاکہ عملے کے تجربات پر غور کیا جا سکے اور جامع کارروائی کی سفارش کی جا سکے۔ ایک بیان میں انتونیو گوتیرس کے دفتر نے کہا کہ وہ کسی بھی قسم کی بدانتظامی کا مقابلہ کرنے کی کوششوں کے کسی بھی بیرونی جائزے کے لیے تیار ہے۔

اقوام متحدہ کو ایک محفوظ قانونی حیثیت حاصل ہے اور سینیئر عملے کو تمام قومی قوانین سے سفارتی استثنیٰ حاصل ہے۔ یہ تنظیم کو اس لیے دیا گیا ہے کہ بغیر کسی مداخلت کے اپنا کام جاری رکھ سکے۔ لیکن اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ یہ عملے کے ذاتی فائدے کے لیے نہیں دیا گیا، اس لیے جنسی زیادتی جیسے جرائم کا ارتکاب کرنے والوں کو یہ تحفظ نہیں دیتا۔ عملے کی تمام شکایات اندرونی طور پر حل کی جاتی ہیں۔ آفس آف انٹرنل اوور سائیٹ سروسز (او آئی او ایس)انتہائی سنگین الزامات کو دیکھتا ہے، جن میں جرائم کے دعوے بھی شامل ہیں، لیکن اس کے پاس کوئی قانونی اختیار نہیں ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.