انٹرنیشنلفیچرڈ پوسٹ

بن لادن کمپنی کو ایک بار پھر مشکلات نے گھیر لیا، سعودی سپریم کورٹ نے 2015ء کے کرین حادثے سے متعلق تمام فیصلوں کو کیا کالعدم قرار دے دیا؟ بڑی خبر آگئی

سپریم کورٹ نے حکم دیا ہے کہ نیا جوڈیشل سرکٹ کیس کا پھر سے جائزہ لینے کے لئے بریت سمیت تمام فیصلے کالعدم قرار دے دیئے

بن لادن کمپنی کو ایک بار پھر مشکلات نے گھیر لیا، سعودی سپریم کورٹ نے 2015ء کے کرین حادثے سے متعلق تمام فیصلوں کو کیا کالعدم قرار دے دیا؟ بڑی خبر آگئی ۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق سعودی سپریم کورٹ نے 2015ء کے کرین حادثے سے متعلق تمام فیصلے کالعدم قرار دے دیئے ۔ میڈیا کے مطابق سپریم کورٹ نے حکم دیا ہے کہ نیا جوڈیشل سرکٹ کیس کا پھر سے جائزہ لے۔ یاد رہے کہ11 دسمبر 2015ء کو مسجد الحرام میں تعمیراتی کام کے لیے استعمال ہونے والی کرین گرنے سے 110 افراد جاں بحق اور 209 زخمی ہوگئے تھے۔ تعمیرات کا ٹھیکہ بن لادن گروپ کے پاس تھا اور حادثے کے بعد گروپ پر تعمیراتی کام کے دوران حفاظتی اقدامات سے لاپرواہی برتنے کا الزام لگایا گیا تھا۔ گزشتہ سال سعودی عدالت نے حرم شریف میں کرین حادثے کے کیس میں بن لادن گروپ کو الزام سے بری کردیا تھا۔عدالتی فیصلے میں کہا گیا کہ کرین گرنے میں بن لادن گروپ کی کوئی کوتاہی ثابت نہیں ہوئی اس لیے گروپ کو مقدمے سے بری کردیا گیا ۔ اس سے قبل مکہ مکرمہ کی فوجداری عدالت نے کیس کے 13 ملزمان کو بھی بری کر دیا تھا۔ اب سپریم کورٹ کے حکم نامے کے تحت بریت کے فیصلے بھی واپس ہوگئے ہیں،کیس کو اب نظرثانی کے لیے نئے جوڈیشل سرکٹ کو بھیجا جائیگا جہاں نئے ججز اس کا جائزہ لیں گے ۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.