انٹرنیشنل

مقبوضہ کشمیر میں میرواعظ عمر فاروق کو نماز جمعہ کی ادائیگی کیلئے مسجد جانے سے روک دیا

گورنر منوج سنہا کے دعوؤں کے برعکس مقبوضہ کشمیر پر قابض بھارتی پولیس نے میر واعظ عمر فاروق کو نماز جمعہ کی ادائیگی کیلئے گھر سے نکلنے ہی نہیں دیا

مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی انتظامیہ کی جارحیت جاری، کشمیری حریت پسند رہنما ء میر واعظ عمر فاروق کو نماز جمعہ کی ادائیگی کے لیے مسجد جانے سے روک دیا۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے گورنر منوج سنہا نے غیر ملکی میڈیا کو میر واعظ عمر فاروق کی نظر بندی کے بارے میں بتاتے ہوئے دعویٰ کیا تھا کہ میر واعظ عمر فاروق کہیں بھی جانے کے لیے آزاد ہیں۔ تاہم کے ایم ایس کا کہنا ہے کہ گورنر منوج سنہا کے دعوؤں کے برعکس مقبوضہ کشمیر پر قابض بھارتی پولیس نے میر واعظ عمر فاروق کو نماز جمعہ کی ادائیگی کے لیے گھر سے نکلنے ہی نہیں دیا۔ کشمیر میڈیا سروس کا بتانا ہے کہ میر واعظ عمر فاروق سری نگر میں 3 سال سے اپنیگھر میں نظربند ہیں، قابض انتظامیہ نے 4 اگست 2019 کو میر واعظ عمرفاروق کو گھر پر نظر بندکر دیاتھا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.