انٹرنیشنلفیچرڈ پوسٹ

برطانیہ میں بھی گیس اور بجلی کے بلوں میں بے پناہ اضافہ، لاکھوں افراد کم کھانا کھانے پر مجبور ، بلوں کی ادائیگی کے لئے گھریلو سامان کو بھی فروخت کرنے پر مجبور

برطانیہ میں 50لاکھ افراد اپنے گھروں کے بلوں کی ادائیگی کے لیے غذا کے کم استعمال پر مجبور ہوگئے ہیں: فلاحی ادارے کی رپورٹ

برطانیہ میں بھی گیس اور بجلی کے بلوں میں بے پناہ اضافہ، لاکھوں افراد کم کھانا کھانے پر مجبور ، بلوں کی ادائیگی کے لئے گھریلو سامان کو بھی فروخت کرنے پر مجبور ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ میں 50لاکھ افراد اپنے گھروں کے بلوں کی ادائیگی کے لیے غذا کے کم استعمال پر مجبور ہوگئے ہیں۔ یہ بات ایک فلاحی ادارے کی جانب سے جاری رپورٹ میں بتائی گئی۔ منی ایڈوائس ٹرسٹ کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ گزشتہ 3 ماہ کے دوران اپنے گھروں میں بجلی کو برقرار رکھنے کے لیے ہر 9 میں سے ایک بالغ برطانوی شہری نے ایک وقت کھانا نہیں کھایا اسی طرح ہر 5 میں سے ایک بالغ فرد کم از کم ایک بل کی ادائیگی کرنے سے قاصر رہا۔

برطانیہ میں 2022ء کے دوران گیس اور بجلی کے بلوں میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے اور20 فیصد افراد کے مطابق اپریل کے بعد سے بلوں میں ہر ماہ اوسطا 100 برطانوی پاؤنڈز کا اضافہ ہوا۔ رپورٹ کے مطابق برطانیہ کے14 فیصد شہریوں کا کہنا تھا کہ وہ بلوں کی ادائیگی کے لیے گھریلو سامان کو فروخت کرنے پر مجبور ہوئے، جبکہ ہر5 میں سے 2 افراد نے غیرضروری اخراجات کی کٹوتی کی۔ محققین کے مطابق بیشتر گھرانوں کو مشکل انتخاب کرنا پڑ رہے ہیں، جیسے بجلی کو بحال رکھنے کے لیے دن کے کونسے وقت کی غذا سے گریز کیا جائے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.