انٹرنیشنلفیچرڈ پوسٹ

بھارتی فوج کی مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر امریکا بہادر ایک بار پھرمیدان میں آگیا، ایسا اعلان کر دیا کہ مودی سرکار بھی سر پکڑ کر بیٹھ گئی

کشمیر سے متعلق امریکی پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں' بھارت اور پاکستان کے درمیان براہ راست مذاکرات سے ہی مسئلہ کشمیر کا حل ممکن ہے

بھارتی فوج کی مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر امریکا بہادر ایک بار پھرمیدان میں آگیا، ایسا اعلان کر دیا کہ مودی سرکار بھی سر پکڑ کر بیٹھ گئی ۔

امریکی محکمہ خارجہ کے اسسٹنٹ سیکرٹری ڈونلڈ لو کا کہنا ہے کہ امریکا نے بھارت میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پراعلی سطح پر بات چیت کی ہے۔ ڈونلڈ لو نے کہا کہ واضح کرنا چاہتا ہوں کشمیر سے متعلق امریکی پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے۔ ڈونلڈ لو نے کہا کہ بھارت اور پاکستان کے درمیان براہ راست مذاکرات سے ہی مسئلہ کشمیر کا حل ممکن ہے، بھارتی حکومت کو کشمیرمیں مقامی الیکشن اور سیاسی حقوق بحال کرنے چاہئیں۔

امریکی محکمہ خارجہ کے اسسٹنٹ سیکرٹری کا کہنا تھا کہ کشمیر میں یقینی بنایا جانا چاہیے کہ میڈیا اپنا کام جاری رکھ سکے، امن کے لیے یہ سب ضروری ہے، امید ہے آئندہ برسوں میں کشمیر میں یہ امن یقینی بنایا جا سکے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ امریکا نے بھارت میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر اعلی سطح پر بات چیت کی ہے۔ اس کے علاوہ پاکستان کو ایف16 جنگی طیاروں کی فروخت سے متعلق سوال پر ڈونلڈ لو نے کہا کہ ایف 16 طیاروں کا یہ منصوبہ فوجی امداد نہیں،فوجی ساز و سامان کی فروخت ہے، امریکا کسی ملک کو فوجی سامان فروخت کرتا ہے تو وہ اس کی تکنیکی معاونت بھی فراہم کرتا ہے۔ انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق ڈونلڈلونیسابق وزیراعظم عمران خان سے متعلق سوال کا جواب نہیں دیا، ڈونلڈ لو نے واضح کیا کہ وہ پاکستان کے سابق وزیر اعظم کے حوالے سے کوئی سوال نہیں لیں گے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.