پاکستان

الیکشن کمیشن کا مشاورتی اجلاس، پی ٹی آئی نے کیا مطالبہ کیا؟ اندرونی کہانی سامنے آگئی

انتخابات سے متعلق سیاسی پارٹیوں کے ساتھ مشاورتی اجلاس میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی)، جمعیت علما اسلام (جے یو آئی)کے نمائندوں نے شرکت کی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) الیکشن کمیشن کے انتخابات سے متعلق سیاسی جماعتوں کے ساتھ مشاورتی اجلاس میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی)90 دن میں انتخابات کروانے کا مطالبہ کر دیا۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق انتخابات سے متعلق سیاسی پارٹیوں کے ساتھ مشاورتی اجلاس میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی)، جمعیت علما اسلام (جے یو آئی)کے نمائندوں نے شرکت کی۔ مشاورتی اجلاس کے بعد الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ اجلاس کے دوران پی ٹی آئی کے وفد نے زور دیتے ہوئے کہا کہ اس وقت حلقہ بندیوں کی ضرورت نہیں ہے اس لیے 90 دن میں انتخابات کروائے جائیں۔

الیکشن کمیشن کے مطابق انہوں نے سے گرفتار لیڈروں اور کارکنوں کی فوری رہائی، سیاسی ریلیوں کی اجازت اور یکساں سیاسی مواقع فراہم کرنے کا بھی مطالبہ پیش کیا۔ اعلامیے کے مطابق اجلاس کے دوران جے یو آئی کے وفد نے موقف اپنایا الیکشن کا انعقاد آئین کا تقاضا ہے، تاہم مردم شماری کے نتائج آچکے ہیں اس لیے حلقہ بندیوں کا عمل پہلے مکمل کرنا چاہیے۔ مشاورتی اجلاس سے متعلق جاری اعلامیے میں الیکشن کمیشن کا کہنا تھا کہ دونوں پارٹیوں کو یقین دلایا ہے کہ انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنایا جائیگا اور کوشش ہوگی کہ الیکشن کا انعقاد جلد ازجلد ہو اور یقینی بنایا جائے گا کہ انتخابات میں تمام پارٹیوں کو یکساں مواقع میسر ہوں۔ الیکشن کمیشن کا کہنا تھا کہ سیاسی جماعتوں سے مشاورت کا یہ عمل آئندہ بھی جاری رہے گا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button